سیکس سکینڈل کے بعد ادب کے نوبل انعام کا اعلان روک دیا گیا


Nobel prize
  • 5
    Shares

سٹاک ہوم : نوبل انعام کااعلان کرنے والی سویڈش اکیڈمی نے جنسی سکینڈل منظرعام پر آنے کے بعد 2018ءکے لیے ادب کے نوبل انعام کا اعلان روک دیاہے۔نیویارک ٹائمز کے مطابق سویڈش اکیڈمی کے سالانہ اجلاس میں اعلان کیا گیا ہے کہ ادب کے نوبل انعام کا اعلان اب اگلے برس کیا جائے گا اور آئندہ سال 2018ءکے ساتھ ساتھ 2019ءکے انعام کابھی اعلان ہوگا۔اس طرح اگلے برس ادب کے دونوبل انعامات دیئے جائیں گے۔سویڈش اکیڈمی کی انعامی کمیٹی میں مئی 2018ءمیں اس وقت سیکس سکینڈل سامنے آیا جب کمیٹی کے ایک رکن پر ایک خاتون کو جنسی طورپر ہراساں کرنے کا الزام عائدکیاگیا۔سویڈش اکیڈمی کا رائٹرز پینل 1901سے ادب کے انعام کاا علان کررہاہے۔اس سے پہلے 1949ءمیں یہ انعام التواءکا شکارہوا تھا جس کے بعد 1950ءمیں ولیم فالکنر کوادب کا نوبل انعام دیاگیا۔سویڈش اکیڈمی جہاں عموماً اتفاق رائے سے فیصلے کیے جاتے ہیں اس جنسی سکینڈل کے بعد تقسیم ہوگئی ہے اوراجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ سردست انعام کا اعلان کرنے سے زیادہ کمیٹی کی ساخت بحال کرنا ضروری ہے۔

فیس بک کمینٹ
image_print




Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*