اختصارئےحسنین رضویلکھاری

حسنین رضوی کا اختصاریہ: کابل کے دروازے پر طالبان کی دستک اور ترکی کی منافقت

آج افغانستان میں امریکہ کا سب سے بڑا ٹھکانہ ” بگرام ” ائیر بیس کابل ترکی کے حوالے کیا جارہاہے ، امریکہ نے یہ ائیربیس تقریباً خالی کردیا ہے اور اپنی وہ تمام تنصیبات جو اس نے گزشتہ کئی دہائیوں سے وہاں انسٹال کی ہوئی تھیں افغانستان سے باہر منتقل کردی ہیں۔ذرائع کے مطابق جو اشیاء امریکی واپس نہیں لےجاسکتے تھے وہ انہوں نے تباہ کردی ہیں تاکہ طالبان کے قبضے میں نہ جاسکیں ۔
ترکی نیٹو کے اتحادی کے طور پر ایک طویل عرصہ سے افغانستان میں امریکہ اور یورپ کے شانہ بشانہ موجود ہے اور تقریباً 5 ہزار سے زائد فوجی کابل و اطراف میں رکھتا ہے ، شام جنگ سے بھاگے ہوۓ ” داعش ” کے دہشت گردوں کو ترکی ہی تھا جو افغانستان لے کر آیا اور یہاں انہیں پناہ گاہیں فراہم کیں . طالبان اور پاکستان نے متعدد بار ترکی سے اس دوغلے کردار پر تحفضات کا اظہار کیا کیونکہ یہ داعشی دہشت گرد پاکستان اور افغانستان کیلیے مستقبل میں دردسر بن سکتے ہیں . اب ترکی اپنے ان لےپالکوں کے تحفظ کیلیے خود یہاں رکناچاہتا ہے جوکہ پاکستان اور طالبان دونوں کیلیے ناقابل قبول ہے ۔
امریکہ اور نیٹو کے انخلا پر یہ کیسے ممکن ہے کہ بقیہ تمام فورسز افغانستان چھوڑ کر چلی جائیں اور ” ترکی ” بدستور براجمان رہے۔
لہذا طالبان نے ترکی کو یہ باور کروایا ہے کہ وہ نیٹو کے اتحادی کی حیثیت سے دیگر نیٹو کے اتحادیوں کی طرح افغانستان سے نکل جاۓ اور منافقت سے باز رہے ۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker