اہم خبریںپنجاب

ڈی آئی جی جیل خانہ جات پنجاب پر قیدی خواتین سے زیادتی کے الزامات : ویڈیو وائرل

لاہور:ڈی آئی جی جیل خانہ جات پنجاب ملک مبشر خان کے دفتر میں قیدی خواتین کے ساتھ زیادتی کے سکینڈل کا انکشاف ہوا ہے۔ سوشل میڈیا پر ایک قیدی خاتون کی وائرل ہونے والی ویڈیو میں الزام عائد کیاگیا ہے کہ ڈسٹرکٹ جیل لاہور میں قیدی خواتین کے ساتھ زیادتی کی جاتی ہے اور انہیں ڈی آئی جی کے دفتر میں لے جا کر ان کے ساتھ شرمناک سلوک کیاجاتا ہے ۔
دارالامان لاہور میں خواتین کے ساتھ زیادتی کے سکینڈل کے بعد لاہور میں قید ی خواتین کے ساتھ زیادتی کے اس نئے سکینڈل کی سوشل میڈیا پر بھر پور مذمت کی جا رہی ہے اور ذمہ دار افرادکے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیاجارہاہے۔ ویڈیو میںالزام لگانے والی قیدی خاتون نے اپنا چہرہ چھپا رکھا ہے ۔
ویڈیو میں قیدی خاتون نے کہا ہے کہ میں ڈسٹرکٹ جیل میں قید ہوں۔ یہاں ہمارے ساتھ بہت ظلم اور زیادتی ہورہی ہے۔ہمیں رات کوجیل سے لے جاتے ہیں اور کہتے ہیں کہ ڈی آئی جی جیل خانہ جات ملک مبشر کو خوش کرنا ہے۔ میرے ساتھ اوربہت سی لڑکیاں ہیں جن کے ساتھ زیادتی ہوتی ہے۔ رات کو جیل سے لے جاتے ہیں اور ادلابدلی ہوتی ہے اورڈی آئی جی کے دفتر میں لے جایاجاتا ہے اور وہاں جاکرکہتے ہیں کہ ہمارے ساتھ برا کام کرو اور زیادتی کرتے ہیں۔
خاتون کے مطابق ڈی آئی جی ملک مبشر کے ساتھ جو افسر ملے ہوئے ہیں ان کاملک مبشر کو سب کا پتہ ہے ۔جس عورت کا بچہ ہونے والاہوتا ہے تو اس کا بچہ ضائع کرادیتے ہیں اور باہر کہتے ہیں کہ اس نے خودکشی کی کوشش کی ہے۔ ہماری وزیراعظم سے گزارش ہے کہ ہماری مدد کریں ۔وہ جیلوں کاچکر لگائیں اوردیکھیں کہ یہاں کیاہوتا ہے۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker