اختصارئےڈاکٹر عباس برمانیلکھاریمزاح

بھائی جان کا ویژن 2020 ۔۔ ڈاکٹر عباس برمانی

جناب عارضی وزیراعظم! ایکسیلنسی چیانگ لی پھنگ! میرے عزیز نوکرشاہو !ہمارے ٹکٹ پہ جیتنے والےاراکین اسمبلی اور پیارے بھولے بھولے جاہل غریب عوام آج کا دن آپ کی تاریخ کے اہم ترین دنوں میں سے ایک ہے کہ آج آپ کا یہ حاکم اعلیٰ آپ کے پسماندہ اور بدبودار علاقے کو ایک اہم منصوبے سے نواز رہا ہے ،میں نے وعدہ کیا تھا کہ چھ ماہ میں لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کر دوں گا ، بس کوئی آٹھ چھ ماہیاں ہی گزری ہیں کہ میں نے ان تمام علاقوں سے لوڈشیڈنگ کا خاتمہ کر دیا ہے جہاں لائن لاسز 10  فیصد سے کم ہیں ، اور اگرآپ کے علاقے میں اس سے زیادہ ہیں تو پھر آپ کی بدقسمتی ، یا پھرآپ بجلی چوری کرتے ہوں گے ، میں نے سسٹم میں ایک لاکھ میگاواٹ بجلی شامل کر دی ہے ، ہم چین ایران اور بھارت کو بجلی برآمد کر نے کے قابل ہو گئے ہیں ،اور اب ہم 2020  ء کی بجلی کی ضروریات کے بارے میں سوچ رہے ہیں ، ہمارا کمال یہ ہے کہ ہم نے یہ کارنامہ کوئلے سے چلنے والے ایسے پلانٹ لگا کر انجام دیا ہے جو باقی دنیا بند کر رہی ہے، یقین نہ آئے تو جناب پھنگ سے پوچھ لیں یہ بھی اپنے ملک میں ایسے پلانٹ ڈائنامائٹ سے اڑا رہے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔اور مزے کی بات یہ ہے کہ ہم کوئلہ بھی آپ کی خاطر کوئی گھٹیا مقامی نہیں، امپورٹڈ  استعمال کر رہے ہیں ۔ آج میں اپنے دست مبارک سے دس ہزار میگاواٹ کے جس پلانٹ کا افتتاح کر رہا ہوں 2020 ء  تک یہ ایک لاکھ میگاواٹ بجلی پیدا کر رہا ہو گا ۔ہم نے بہاولپور کے صحرا میں 10ہزار میگاواٹ کا سولر پلانٹ لگایا جس کی گنجائش ایک لاکھ میگاواٹ تک بڑھا دیں گے اور 2020  ء تک ہم ایک کروڑ میگاواٹ سے زیادہ بجلی پیدا کر رہے ہوں گے جو ہم سی پیک کے راستے دنیا بھر کو برآمد کریں گے ، ہمارے محبوب قائد میاں محمد نواز شریف کا ویژن یہ ہے کہ 2030 ء  تک ہم زمین سے باہر دوسرے سیاروں کو بھی بجلی برآمد کریں۔ ترقی کے دشمنوں کی وجہ سے ہماری اورنج لائن ٹرین دو سال لیٹ ہو گئی ورنہ آج ہم جھنگ بلکہ حویلی بہادر شاہ میں میٹرو ٹرین کا آغاز کر رہے ہوتے   ۔۔۔ اور خدا کی قسم میرے کسی بھی منصوبے میں اگر 2020 ء  تک بھی ایک پائی کی کرپشن ثابت ہو جائے تو اگر اس وقت میں زندہ نہ بھی ہوں تو میری لاش کو قبر سے نکال کے مینار پاکستان کے ساتھ لٹکا کر پھانسی دے دی جائے ، دشمنوں کو بھی علم ہے کہ میرے منصوبے دھیلے بھر کی کرپشن سے بھی پاک ہیں لہذا کسی آڈٹ کی صورت میں شرمندگی سے بچنے کے لئے انہوں نے میرے تمام منصوبوں کے ریکارڈ نذرآتش کر دیے ہیں۔۔عظمت وہ ہوتی ہے جس کے دشمن بھی معترف ہوں ، جب ماڈل ٹاؤ ن قتل عام کے بعد بھائی جان میری قربانی دینے پہ تیار ہو گئے تھے اور میرا استعفیٰ  تیار کر لیا تھا تو زرداری جیسے شخص نے آگے آ کر انہیں اس حماقت سے منع کیا۔ چین اور ترکی کے ٹھیکیدار اور انویسٹر کہتے ہیں کہ آپ جیسی پارٹی ہمیں سری لنکا اور ڈیموکریٹک رپبلک آف کانگو میں بھی نہیں ملی، یہ ہوتی ہے عظمت اور یہ عظمت مجھے آپ کی خدمت اور بھائی جان کے ویژن کی بدولت ملی ، اور میری ویژن ماشاءاللہ اتنی تیز ہے کہ چودھری نثار کا ہاتھ تھام کے گھپ اندھیری راتوں میں تاریک گوشوں میں تاریخی ملاقاتیں کرتا رہا ہوں۔ہمارے 2020 کے ویژن میں شامل منصوبوں کے بارے میں جان کے آپ کی عقل دنگ تک جائے گی ۔ ہم 2018 ء  کے الیکشن کے فورا بعد بحیرہ عرب میں دریائے سندھ کے ڈیلٹا سے تبت کی جھیل مانسروور میں اس کے دہانے تک دریائے سندھ کو جہازرانی  کے قابل بنانے کے منصوبے پر کام کا آغاز کریں گے اور چھ ماہ میں اسے مکمل کریں گے ۔ہمارے دریا راوی ،  ستلج اور بیاس جو سندھ طاس معاہدے میں بھارت کو دے دیے گئے تھے ہم سینکڑوں بڑے بڑے سولر ٹیوب ویل لگا کر انہیں دوبارہ بہائیں گے۔ہم چاند،  مشتری ، زہرہ اور مریخ تک میٹرو خلائی شٹل سروس شروع کریں گے۔ہم سورج تک بجلی کے تار بچھا کر ڈائریکٹ بجلی زمین  پر لائیں گے اور براعظم افریقہ کو برآمد کریں گے۔ہم بحیرہ عرب کی تہہ میں ایک سرنگ بنا کر کراچی سے دبئی تک سڑک اور ریلوے لائن  بچھا دیں گے۔بھائی جان کا ایک اور ویژنری پلان     کے ٹو سے ماؤ نٹ ایورسٹ تک معلق پل بنا کے پاکستان کو دوست ملک نیپال سے جوڑنا ہے۔تو آئیں ترقی کے سفر میں میرا اور بھائی جان کا ساتھ دیں۔

فیس بک کمینٹ

متعلقہ تحریریں

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker