عمران عثمانیکھیللکھاری

کورونا،انگلش کرکٹ سیزن 7 ہفتے کیلئے موخر،آئی پی ایل کے ساتھ دھونی کا مستقبل بھی خطرے میں : عمران عثمانی کا ون ڈے راؤنڈ اپ

انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ نے رواں سال کا پروفیشنل کرکٹ سیزن 7 ہفتے کیلئے موخر کردیا ہے. اس طرح ملک میں کسی بھی قسم کی کرکٹ 27 مئی تک نہیں ہوگی. سیزن کے آغاز کی رسمی تاریخ 28 مئی مقرر کی گئی ہے اور اس حوالے سے کورونا وائرس کی جاری تباہ کاریوں کا قریب سے جائزہ لیا جائے گا اور حالات و حکومت کی ہدایات کی روشنی میں فیصلہ تبدیل بھی کیا جاسکے گا .ای سی بی چیف ایگزیکٹو ٹام ہوریسن کے مطابق 4 جون سے ویسٹ انڈیز کیخلاف شیڈول ٹیسٹ سیریز میں بھی تبدیلی متوقع ہے جبکہ پورا سیزن پھر ری شیڈول ہوگا . فیصلہ کائونٹیز چیف اور ایم سی سی کمیٹی سے مشاورت کے بعد کیا گیا ہے.
انگلینڈ میں کائونٹی سیزن کا آغاز اپریل کے دوسرے ہفتہ سے ہونا تھا لیکن اب اس کے لئے 28 مئی عبوری تاریخ مقرر کی گئ ہے . انگلینڈ میں جمعہ کی شب سے لاک ڈائون کی صورتحال ہے. انگلینڈ بورڈ کے اس اعلان کے بعد بھارت کی آئی پی ایل کے 15 اپریل سے آغاز کے امکانات ختم ہوگئے ہیں. بھارتی کرکٹ بورڈ نے اسے 29مارچ سے 15 اپریل تک قریب 18 روز کیلئے موخر کیا تھا.
**فرسٹ کلاس کرکٹ ختم؟**
انگلینڈ کرکٹ بورڈ نے اپنے فیصلے میں سیزن ری شیڈول کرنے کی بات کی ہے جس کا ایک مطلب کائونٹی میچ کی تعداد کم کرنا بھی ہوسکتا ہے لیکن سابق کپتان ایلک سٹور ٹ نے ایک اور بات کہہ کر گویا فرسٹ کلاس کرکٹ کو اس سال کیلئے ختم کردیا ہے. ان کا کہنا تھا کہ اس کے بعد کے وقت میں 100 بالز ایونٹ اور ٹی 20 بلاسٹ ہی ترجیح ہوگی کیونکہ اگر جون کے آغاز میں کرکٹ شروع ہوبھی گئی تو پریکٹس کا دورانیہ نکال کر 100 دن بمشکل بچیں گے .
**آسٹریلین کرکٹرز کا بھارت کے سفر سے انکار **
آسٹریلیا کرکٹ ٹیم کے کرکٹرز نے اگلے ماہ بھارت کے دورے سے انکار کردیا ہے. بھارتی بورڈ نے آئی پی ایل کی مجوزہ تاریخ 15 اپریل مقرر کر رکھی ہے. اول تو لیگ کا آغاز اپریل میں ممکن ہی نہیں اور اگر ہوبھی جائے تو آسٹریلیا کا کوئی کھلاڑی کورونا وائرس کی وجہ سے شریک نہیں ہوگا.
**ایم ایس دھونی کا ورلڈ ٹی 20 کھیلنے کا خواب بکھر گیا **
گزشتہ سال ورلڈ کپ 2019 کے سیمی فائنل میں نیوزی لینڈ سے شکست کے بعد سے تاحال ایک میچ بھی نہ کھیلنے والے سابق بھارتی کپتان ایم ایس دھونی کا کیریئر ختم ہوگیا؟ اس سوال کا جواب کسی کے پاس نہیں کیونکہ وکٹ کیپر بیٹسمین نہ ریٹائرمنٹ لیتے ہیں
اور نہ ہی اپنے مستقبل کی وضاحت کرتے ہیں خیال یہ تھا کہ رواں سال وہ آئی پی ایل میں اپنی اسٹرینتھ اور فارم ثابت کرکے ٹیم میں واپسی کریں گے لیکن اب آئی پی ایل کے امکانات معدوم اور دھونی کیلئے مواقع ختم ہوتے جارہے ہیں.اگر دھونی کو موقع نہ ملا تو ان کی ورلڈ ٹی 20 میں شرکت قریب نا ممکن ہوگی. سابق کپتان سنیل گاواسکر نے بھی کچھ ایسا ہی کہا ہے.

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker