اہم خبریں

ریڈیو پاکستان نے بوڑھوں کو کمپیئرنگ سے روک دیا :چہیتے لاکھوں روپے لیتے رہے

ملتان : پاکستان براڈکاسٹنگ کارپوریشن نے ریڈیو پاکستان ،ایف ایم 101اور ایف ایم 93سمیت اپنے تمام چینلز پر 60سال سے زیادہ عمر کے افراد کو پروگراموں کی کمپیئرنگ سے روک دیا ہےان میں سے بعض چہیتے سپیشل کیٹیگری کے نام پر ریڈیو سے ماہانہ لاکھوں روپے وصول کرتے رہے ۔اس سلسلے میں جاری ہونے والے مراسلے میں سٹیشن ڈائریکٹر صاحبان کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ اپنے اپنے اسٹیشنوں پر 60سال سے زیادہ عمر کے افراد کو کمپیئرنگ سے روک دیں اورتمام پروگراموں کے کمپیئرز کے قومی شناختی کارڈ بھی ارسال کریں تاکہ ان کی عمر کاتعین کیا جاسکے۔مراسلے میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ 60سال سے زیادہ عمر کے افراد اور فنکاروں کی خدمات تجزیہ کار، ماہر ،ڈرامہ نویس اور سکرپٹ نویس کے طورپر حاصل کی جاسکتی ہیں ۔اس فیصلے سے صرف ملتان اسٹیشن پر 12افراد متاثر ہونگے ۔ ان میں سے تین افراد ایسے بھی تھے جنہیں سابق سٹیشن مینیجر ملتان کے دور میں سپیشل کیٹیگری دی گئی تھی۔اس کیٹیگری میں ان کا معاوضہ دوہزار سے چار ہزار روپے فی پروگرام تک مقرر کیاگیا تھا اور یہ ہدایت بھی کی گئی تھی کہ انہیں مہینے کے 21پروگرام دیئے جائیں۔اسی طرح دیگر اسٹیشنوں پر بھی 60سال سے زیادہ عمر کے بہت سے افراد سپیشل کیٹیگری میں ریڈیو پروگراموں کی کمپئرنگ کررہے تھے۔ذرائع کے مطابق یہ فیصلہ ریڈیو پاکستان کو بڑھتے ہوئے مالی دباؤ سے نکالنے کے لیے کیاگیا ہے تاکہ اس مد میں ہونے والے اخراجات کم کیے جاسکیں اور ریڈیو ملازمین اور فنکاروں کی تنخواہوں اور دیگر مراعات کی ادائیگی میں رکاوٹ دورہوسکے۔نئے فیصلے کے بعد جو گنجائش پیدا ہوگی اس میں نوجوانوں کو اپنی صلاحتیوں کے اظہار کے مواقع میسر آئیں گے۔

فیس بک کمینٹ

متعلقہ تحریریں

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker