اہم خبریں

سلام یا حسینؑ : گلی گلی ماتمی جلوس ۔۔ سکیورٹی کے سخت انتظامات

ملتان : نواسہ رسول حضرت امام حسینؑ اور ان کے ساتھیوں نے کربلا کے میدان میں جو عظیم قربانی پیش کی اس معرکے کی یاد میں آج ملک کے تمام چھوٹے بڑے شہروں اور دیہات میں علم،شبیہہ ذوالجناح اور تعزیے کے جلوس برآمد کیے جا رہے ہیں۔ یوم عاشور پر ملک بھر میں سکیورٹی کے سخت ترین انتظامات کیے گئے ہیں۔کراچی سے کشمور اور کوئٹہ سے بلتستان تک فول پروف انتظامات اور ماتمی جلوس کے راستے سیل ہیں ۔ فضائی اور سی سی ٹی وی کیمروں سے نگرانی بھی کی جا رہی ہے۔ بیشتر شہروں میں موبائل فون سروس کی معطلی اور ڈبل سواری پر پابندی آج بھی برقرار رہے گی ۔کراچی میں یوم عاشور کا مرکزی ماتمی جلوس نشترپارک سے برآمد ہوا۔جلوس میں علم، ذوالجناح، گہوارہ علی اصغر اور کربلا کی یاد تازہ کرتے تعزیے بھی ہمراہ ہیں ۔یوم عاشورپرکراچی میں خصوصی سکیورٹی پلان تشکیل دیا گیا ہے۔ نمائش سے کھارادر تک 150 سنائپرز مختلف عمارتوں پر تعینات ہیں۔ پولیس اور رینجرز کے ہزاروں اہلکار ڈیوٹی پر موجود ہیں، جلوس کے راستوں کی 300 کیمروں سے مانیٹرنگ کی جا رہی ہے۔ ماتمی جلوس کی فضائی نگرانی بھی کی جارہی ہے ۔ لاہور میں یوم عاشور کا مرکزی ماتمی جلوس روایتی راستوں پر رواں دواں ہے۔ نثار حویلی سے برآمد ہونے والا عزاداروں کا جلوس آج شام کو کربلا گامے شاہ پہنچ کر ختم ہوگا۔جلوس کے شرکا نماز ظہرین رنگ محل چوک پر ادا کریں گے۔نماز مغربین کربلا گامے شاہ میں ادا کی جائے گی۔ جلوس کی نگرانی کیلئے 250 سی سی ٹی وی کیمرے نصب کیے گئے ہیں۔ سکیورٹی کیلئے جلوس کے راستوں پر اسنائپرز بھی تعینات ہیں۔
موبائل فون سروس صبح 8 بجے سے شام 7 بجے تک جزوی بند رہے گی۔اسلام آباد میں مرکزی جلوس سیکٹر جی سکس کی امام بارگاہ سے برآمد ہو کر روایتی راستوں سے گزرے گا۔پشاور میں مرکزی ماتمی جلوس امام بارگاہ آغا سید علی شاہ مینا بازار سے برآمد ہوگا۔فیصل آباد میں یوم عاشورکا مرکزی جلوس عزا خانہ شبیر سے برآمد ہو کر واپس عزا خانہ شبیر پر ہی اختتام پذیرہوگا۔ پولیس اور ایلیٹ فورس کے علاوہ پاک فوج کے جوانوں نے بھی سکیورٹی کے فرائض سنبھالے ہیں۔راولپنڈی میں یوم عاشور کا مرکزی جلوس امام بارگاہ عاشق حسین سے برآمد ہوا جس میں پانچ بڑے جلوس شامل ہوں گے۔ سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔ملتان میں مرکزی ماتمی جلوس ہیرہ حیدری سے برآمد ہونے کے بعد روایتی راستوں پر رواں دواں ہے۔ جلوس کی گزرگاہ کے اطراف تمام راستے بند ہیں ۔کوئٹہ میں بھی شہدائے کربلا کو خراج عقیدت پیش کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔ یوم عاشورکامرکزی جلوس علمدارروڈ رحمت چوک سے برآمد ہوا۔ سکیورٹی کے فول پروف انتظامات کئے گئے ہیں۔ملک کے دیگر چھوٹے بڑے شہروں میں بھی کربلا والوں کو یاد کیا جا رہا ہے۔۔ذاکرین شہدائے کربلا کے مصائب بیان کر رہے ہیں اورعزاداران سینہ کوبی اور زنجیرزنی کرکےشہدائے کربلا کو نذرانہ عقیدت پیش کر رہے ہیں۔رات کو مجالسِ شام غریباں برپا ہوں گی ۔

فیس بک کمینٹ

متعلقہ تحریریں

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker