اہم خبریں

ایگزیکٹ اور بول کے مالک شعیب شیخ کو ہتھکڑی لگ گئی

اسلام آباد : ایگزیکٹ جعلی ڈگری سکینڈل کیس میں کمپنی کے مالک شعیب شیخ سمیت 23 ملازمین کو 7 سال قید اور جرمانے کی سزا سنا دی ہے۔تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ نے سیشن جج ممتاز حسین کو دوبارہ مقدمہ سننے کا حکم دیاجس کے بعد شعیب شیخ پر جعلی ڈگری کے تمام الزامات ثابت ہوگئے جبکہ کیس میں سابق جج پرویز القادر میمن نے رشوت لے کر شعیب شیخ کو بری کر دیا تھا۔جج ممتاز حسین نےجعلی ڈگری سکینڈل میں آج فیصلہ سناتے ہوئے کمپنی کے مالک شعیب شیخ کو 23 ملازمین سمیت 7 سات سال کی سزا سنائی جبکہ تمام ملزمان کو 5، 5 لاکھ روپے جرمانہ بھی ادا کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔سماعت کے دوران وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) کے وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ ایگزیکٹ نے 13 ہزار سے زائد ویب سائٹس کی ڈومین خریدی، ویب سائیٹ ڈومین اور ہوسٹنگ کے شواہد ناقابل تردید ہیں اور فرانزک شواہد تبدیل کرنے کا الزام غلط ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ایف آئی اے نے ایگزیکٹ کے خلاف کارروائی کسی میڈیا گروپ کی ایماء پر نہیں کی تھی اگر سیکیورٹیز ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) اور پاکستان ٹیلی کمیونکیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) نے اپنا کام نہیں کیا تو اس کا مطلب یہ نہیں کہ ایف آئی اے بھی کارروائی نہ کرے۔عدالت نے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کیا جسے کچھ دیر بعد سنایا گیا۔

فیس بک کمینٹ

متعلقہ تحریریں

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker