اہم خبریں

عمران خان اور مائیک پومپیو کی گفتگو، پاکستانی دفتر خارجہ موقف سے دستبردار

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان اور امریکی سیکریٹری آف اسٹیٹ کے درمیان ہونے والی ٹیلی فونک گفتگو کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال کے باعث دفتر خارجہ اپنے موقف سے پیچھے ہٹ گیا۔
ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق صحافیوں کو بریفنگ دیتے ہوئے ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل کا کہنا تھا کہ ’ہم اس معاملے کو یہیں ختم کرنا چاہتے ہیں، سیاسی طور پر ضرورت اس امر کی ہے کہ اب آگے دیکھا جائے‘۔خیال رہے کہ امریکی سیکریٹری آف اسٹیٹ مائیک پومپیو کی پاکستانی وزیراعظم عمران خان سے ہونے والی گفتگو کے بارے میں امریکی اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کا کہنا تھا کہ گفتگو میں دہشت گردی پر بھی بات چیت ہوئی، لیکن پاکستان نے اسے مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس دوران دہشت گردی پر کوئی بات نہیں ہوئی، اس کے باوجود امریکا اپنے موقف پر ڈٹا رہا۔واضح رہے کہ ایک موقع پر ایسا لگ رہا رہا تھا کہ یہ تنازع اس قدر شدت اختیار کر جائے گا کہ اس سے امریکی سیکریٹری آف اسٹیٹ مائیک پومپیو کا دورہ پاکستان بھی متاثر ہوسکتا ہے۔لیکن بعد ازاں ایسا محسوس ہوا کہ حکومت چاہتی ہے دورہ خوشگوار ماحول میں وقوع پذیر ہو اور اسی لیے حکومت اپنے موقف سے پیچھے ہٹ گئی۔تاہم اس حوالے سے یہ باتیں بھی گردش کررہی ہیں کہ دفتر خارجہ کے اپنے موقف سے دستبردار ہونے کی وجہ یہ ہے کہ امریکا کی جانب سے گفتگو کی تحریر جاری کی گئی ہے جس سے پاکستانی موقف غلط ثابت ہوتا ہے۔اس حوالے سے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھی سینٹ اجلاس میں تقریر سے بھی اس بات کا اندازہ ہوتا ہے کہ پاکستان مزید اس معاملے کو طول نہیں دینا چاہتا، اپنی تقریر کے دوران ان کا کہنا تھا کہ ’غلطیاں ہوجاتی ہیں اور ہو گئیں ہیں‘۔
(بشکریہ: ڈان نیوز)

فیس بک کمینٹ

متعلقہ تحریریں

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker