اہم خبریںپنجابسندھ

پنجاب اور سندھ میں تعلیمی ادارے 15 ستمبر سے مرحلہ وار کھولنے کا اعلان

اسلام آباد : صوبہ سندھ اور پنجاب نے کورونا وائرس کے سبب بند تعلیمی اداروں کو 15 ستمبر سے مرحلہ وار کھولنے کا اعلان کردیا اور اس سلسلے میں شیڈول بھی جاری کردیا گیا۔
وزیر تعلیم سندھ سعید غنی نے ایک بیان میں بتایا کہ صوبے میں تمام تعلیمی ادارے 15 سے 30 ستمبر کے دوران کھول دیے جائیں گے۔
سعید غنی نے تعلیمی اداروں کے مرحلہ وار کھولنے سے متعلق تفصیل بتائی اور کہا کہ پہلے مرحلے میں 15 ستمبر سے نویں سے تمام ہائر کلاسز بشمول تمام جامعات کھول دی جائیں گی۔صوبائی وزیر تعلیم کا کہنا تھا کہ 22 ستمبر سے چھٹی سے آٹھویں جماعت تک جبکہ 30 ستمبر سے پری پرائمری اور پرائمری کلاسز کے لیے اسکولز کھول دیے جائیں گے۔
تاہم انہوں نے واضح کیا کہ اگر کسی اسکول یا علاقے میں کووڈ-19 کے کیسز میں اضافہ ہوتا ہے تو وہ اسکول یا متعلقہ علاقے کے اسکولز بند کیے جاسکیں گے۔
سعید غنی کے مطابق اسکول میں ماسک کا استعمال مکمل طور پر لازمی ہوگا، تاہم ماسک لازمی نہیں کہ صرف سرجیکل ہو بلکہ گھر میں کپڑے کا ماسک بھی قابل استعمال ہوگا۔انہوں نے کہا کہ تمام اسٹینڈرڈ آپریٹنگ پروسیجر (ایس او پیز) پر مکمل عمل پیرا ہونا ہوگا، ایسا نہ کرنے والے ادارے کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔اپنے بیان میں ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ وفاقی سطح پر بنائی گئی تعلیمی کمیٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ تعلیمی ادارے 15، 22 اور 30 ستمبر سے مرحلہ وار کھولے جائیں گے تاہم ہر تاریخ سے ایک روز قبل دوبارہ جائزہ بھی لیا جائے گا۔
ساتھ ہی سندھ کے وزیر تعلیم کا کہنا تھا کہ اگر کوئی صوبہ اپنی سہولیات کے تحت کسی ایک یا کچھ اسکولز کو ایس او پیز کی تیاری نہ ہونے پر کچھ دن کی بندش کی مہلت دے سکتا ہے۔
سعید غنی نے بتایا کہ کمیٹی کے فیصلے کے مطابق تمام تعلیمی ادارے اس بات کو لازمی یقینی بنائیں گے کہ اگر کسی بچے کو بخار یا کھانسی ہے تو وہ اسے اسکول نہ آنے دے، مزید یہ کہ تمام صوبے اپنے اپنے صوبے میں محکمہ صحت کے ساتھ مل کر مانیٹرنگ کمیٹیاں تشکیل دیں جو روزانہ کی بنیاد پر اسکولوں کا معائنہ کریں۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker