اختصارئےشہزاد عمران خانلکھاری

کورونا :افطاریوں اور قربانی کا اصل موسم یہی ہے ۔۔ شہزاد عمران خان

ملک کی موجودہ صورتحال کو دیکھ کر دل انتہائی ملول ہے ۔ یہ لاک ڈاﺅن کی صورتحال کب تک برقراررہتی ہے اور غریب دیہاڑی والے مزدور دکانوں پر کام کرنے والے افراد کا کیا ہوگا ۔۔ یہ سب سے اہم سوال ہے ۔
حکومت نے 70لاکھ مزدوروں کوماہانہ تین ہزار روپے ماہانہ یعنی سو روپے روزانہ کی امداد دینے کا اعلان کیا ہے جو کسی بھی طرح سے کافی نہیں ہے۔ یہ امداد کب ملتی ہے اور کتنوں کوملتی ہے یہ تو اللہ جانتا ہے یا امداد تقسیم کرنے والے جانتے ہیں کیونکہ سنا ہے کہ بے نظیر انکم سپورٹ میں بھی بہت سے گریڈ20تک کے افسران اپنا حصہ لیتے رہے ہیں۔
میں بات کررہا تھا ان خاندانوں کی جو اس لاک ڈاﺅن کے دنوں میں انتہائی مشکل کاشکارہوں گے۔جب وہ اپنی جمع پونجی بھی خرچ کرچکیں گے پھر وہ کیا کریں گے ۔ایسے میں بھوک کے باّث ملک میں انارکی پھیلنے کا خدشہ موجود ہے ۔۔۔ میرے ذہن میں خیال آیا کہ وہ لوگ جو رمضان کے مہینے میں لوگوں کی افطاریاں کرواتے ہیں اور بڑے بڑے بینر پوسٹر اور کسی نہ کس طرح میڈیا پربھی اپنی افطاری کی خبر کا سن کر سینہ ٹھونک کر کہتے ہیں کہ دو ہزارلوگوں کو افطاری کرائی ہے اس دیکھا دیکھی میں اوربھی بہت سے لوگ اس ڈگر پر چل نکلتے ہیں ۔یہی حال ہم قربانی کے مہینے میں بھی دیکھتے ہیں ۔لاکھوں روپے کے جانور خرید کر گھر کے باہر باندھ کر گلیوں محلوں میں پھرا کر اپنے علاقے والوں پر رعب جھاڑتے ہیں کہ ہمارا قربانی کاجانور دودھ پیتا ہے ۔پستہ بادام کھاتا ہے، مکھن کھاتا ہے، ہم نے بڑی محنت اور محبت سے پالا ہے۔ ایسے صحت مند جانوروں کے نام رکھے جاتے ہیں پھرمیڈیاوالوں کو بلا کر اپنے جانوروں کی تشہیر کی جاتی ہے
میری ان سب افراد سے دست بدستہ گزارش ہے کہ یہ وقت اصل قربانی ،اصل ثواب کمانے، بھوکوں کو کھانا کھلانے کا ہے ۔ ایسے افراد اپنے علاقوں میں نکلیں ایسے لوگوں کو تلاش کریں جوعزت نفس کی وجہ سے ہاتھ پھیلانے سے قاصر ہیں جن کے گھروں میں آنے والے ملکی حالات کے پیش نظر چولہا بھی جلتا ہے یا نہیں ۔۔ ان کے لیے راشن کا بندوبست کریں ۔ ہم سب نے اس مشکل ترین وقت میں ایک دوسرے کا ساتھ دینا ہے۔ہمیں ایک قوم بن کر دکھانا ہے ۔اسی طرح سے کسی کی مدد کریں کہ کسی کی دل آزاری نہ ہو ۔ یہ نہیں کہ ایک آٹے کاتھیلا دے کر دس افراد ہاتھ رکھ کر تصویر بنوا کر لینے والے کی عزت کاجلوس نکال د یں۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker