ادبشاعریقمر ساجدلکھاری

السلام ڈاکٹر سلام ۔۔ قمر ساجد کی نظم

(دنیا بھر کے ڈاکٹروں کے نام )

السلام ڈاکٹر سلام
مہربان ڈاکٹر سلام
لشکر اجل سے تو دبنگ
سب سے آگے لڑ رہا ہے جنگ
تو کھڑا ہے زندگی کے سنگ
زندگی کی جنگ کے امام
مہربان ڈاکٹر سلام
چھوڑ جائیں جب سبھی رفیق
دکھ میں کوئی بھی نہ ہو شریک
تھا متا ہے تو ہی آکے ہاتھ
پوچھتا نہیں ہے نسب و نام
مہربان ڈاکٹر سلام
ہم نہیں ہیں ساتھ ساتھ آج
فرض ہے بچائیں ہم سماج
فاصلہ ہے مرض کا علاج
ڈاکٹر کا ہے یہی پیام
مہربان ڈاکٹر سلام
پرچم حیات ہو بلند
اے مری زمین ارجمند
خوش رہیں پرنداور چرند
مٹ نہ پائے آدمی کا نام
مہربان ڈاکٹر سلام
السلام ڈاکٹر سلام
مہر بان ڈاکٹر سلام

فیس بک کمینٹ

متعلقہ تحریریں

مزید پڑھیں

Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker