اہم خبریں

’انڈیا بزورِ ہتھیار کشمیری مسلمانوں کو اقلیت بنانا چاہتا ہے‘ : شاہ محمود قریشی

جنیوا : پاکستان کے وزیرِ خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ انڈیا ہتھیاروں کے زور پر اپنے زیرِ انتظام جموں و کشمیر میں مسلمانوں کو اقلیت میں تبدیل کرنا چاہتا ہے۔منگل کو جنیوا میں اقوامِ متحدہ کی انسانی حقوق کونسل سے خطاب کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ انڈیا کا یہ دعویٰ شدید جھوٹ ہے کہ یکطرفہ اقدامات اس کا اندرونی معاملہ ہے۔ ’کشمیر انڈیا کا اندرونی معاملہ نہیں ہے، بلکہ یہ سات دہائیوں سے اقوامِ متحدہ کے ایجنڈے پر موجود ہے۔ 16 اگست کو سلامتی کونسل میں جموں اور کشمیر پر ہونے والی سلامتی کونسل کی میٹنگ اس حقیقت کی تائید کرتی ہے۔



‘انھوں نے یہ بھی کہا کہ اپنے زیرِ انتظام کشمیر کی خصوصی حیثیت کا خاتمہ کر کے انڈیا اپنی واحد مسلم اکثریتی ریاست میں مسلمانوں کو اقلیت میں بدلنا چاہتا ہے۔انھوں نے کہا کہ ’انڈیا کی جانب سے پانچ اگست کو سلامتی کونسل کی جانب سے متنازع علاقہ تسلیم کیے گئے جموں و کشمیر کی حیثیت تبدیل کرنے کے یکطرفہ اقدامات بین الاقوامی قانون کے تحت غیر قانونی ہیں۔‘ان کا کہنا تھا کہ یہ اقدامات متنازع علاقوں سے اور ان کی جانب ہجرت کی ممانعت کرنے والے جنیوا کنونشن کی خلاف ورزی ہیں۔کشمیر میں انسانی حقوق کی صورتحال پر تبصرہ کرتے ہوئے انھوں نے بی بی سی کی اس رپورٹ کا حوالہ بھی دیا جس میں ایک کشمیری نوجوان نے انڈین فورسز کے تشدد سے مجبور ہو کر کہا تھا کہ ‘ہم پر تشدد نہ کریں، بس گولی مار دیں’۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ انڈیا کے زیرِ انتظام کشمیر میں اس کی فورسز نوجوانوں پر بہیمانہ تشدد کر رہی ہیں جبکہ وادی میں جان بچانے والی ادویات اور کھانے پینے کی اشیا کی قلت ہو چکی ہے۔انھوں نے انڈیا پر زور دیا کہ وہ انسانی حقوق کے بین الاقوامی اداروں اور بین الاقوامی میڈیا کو اپنے زیرِ انتظام کشمیر میں رسائی دے۔


شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ انڈیا نے پاکستان کی جانب سے مذاکرات کی تمام پیشکش مسترد کی ہیں۔وزیرِ خارجہ نے کہا کہ پیلٹ گنز کے استعمال سے کشمیر کے نوجوان اپنی بینائی گنوا رہے ہیں جبکہ زخمی ہونے پر وہ ہسپتال جانے سے بھی گھبراتے ہیں کہ کہیں انھیں انڈین فورسز گرفتار نہ کر لیں۔انھوں نے کہا کہ ’یہ قرونِ وسطیٰ کی بات نہیں ہو رہی بلکہ یہ ظلم و ستم 21 ویں صدی میں ہو رہا ہے۔‘انھوں نے انڈیا پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ’یہ دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت ہونے کی دعویدار اور سلامتی کونسل کی مستقل رکن بننے کی خواہش رکھنے والی مملکت کا اصل چہرہ ہے۔‘

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker