اہم خبریں

بیرون ملک علاج کے لیے نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست

اسلام آباد : پاکستان مسلم لیگ نواز کے قائد اور سابق وزیر اعظم نواز شریف کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سے نکالنے کے لیے شریف خاندان نے وزارتِ داخلہ میں درخواست دے دی ہے۔ وزارت داخلہ کے حکام نے درخواست موصول ہونے کی تصدیق کی ہے۔ یہ درخواست پاکستان مسلم لیگ نواز کے صدر اور پنجاب کے سابق وزیر اعلی میاں شہباز شریف کی طرف سے دی گئی ہے۔



وزارت داخلہ کے حکام کے مطابق اس درخواست میں میاں نواز شریف کی خرابی صحت کے بارے میں تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ممکنہ طور پر بیرون ملک علاج کروانے کا ذکر کیا گیا ہے اور اسی بنا پر ان کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست کی گئی ہے۔ واضح رہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے بحیثیت وزیرِ داخلہ میاں نواز شریف کا نام ای سی ایل میں شامل کیا تھا۔



گذشتہ دنوں وفاقی وزیرِ داخلہ اعجاز شاہ کی طرف سے یہ بیان سامنے آیا تھا کہ میاں نواز شریف کا نام ای سی ایل میں شامل نہیں ہے تاہم بعد ازاں وزیرِ داخلہ کا کہنا تھا کہ میاں نواز شریف کا نام نیب کی درخواست پر ای سی ایل میں شامل کیا گیا تھا۔ وزارت داخلہ کے حکام کے مطابق میاں نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا معاملہ وفاقی کابینہ کے آئندہ اجلاس میں پیش کیا جائے گا اور کابینہ ہی اس ضمن میں کوئی فیصلہ کرے گی۔



دوسری جانب پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے اپنے والد اور پاکستان کے سابق وزیرِ اعظم نواز شریف کی صحت پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ انھیں علاج کے لیے ملک سے باہر چلے جانا چاہیے۔ جمعہ کو لاہور میں عدالت میں پیشی کے موقع پر جب مریم نواز سے یہ سوال کیا گیا کہ کیا نواز شریف ملک سے باہر جا رہے ہیں تو ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کی صحت خراب ہے اور انھیں علاج کے لیے بیرون ملک جانا چاہیے۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker