2018 انتخاباتاہم خبریں

نواز اور مریم کی طرف سے وطن واپسی کا اعلان : ایئر پورٹ سے گرفتاری کا فیصلہ

لندن : سابق وزیر اعظم اور مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف اور ان کی صاحب زادی مریم نواز نے وطن واپسی کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ جس جدوجہد کا آغاز کیا اسے آگے بھی جاری رکھوں گا۔لندن میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے نواز شریف نے کہا کہ ’میرے خلاف ہر وہ ہتھکنڈا استعمال کیا گیا جس کی مثال نہیں ملتی، میں نے اپنے اور بیٹی کیلئے نہیں سوچا، میں نے صرف 109 پیشیاں ہی نہیں بھگتیں بلکہ غداری کے فتوے بھی سنے۔‘انہوں نے کہا کہ ’جس جدو جہد کا میں نے آغاز کیا ہے کہ اس میں اسی طرح کے فیصلے دیئے جاتے ہیں، کسی کو ہتھکڑیاں لگتی ہیں، کسی کو ہائی جیکر قرار دیا جاتا ہے، سیاسی اور مذہبی جماعتوں سے دھرنے کروا کر سیاسی دباؤ ڈالا جاتا ہے، سیاسی پارٹیوں کی توڑ پھوڑ کی جاتی ہے اور ساتھیوں کی وفاداریاں تبدیل کرائی جاتی ہیں۔‘ان کا کہنا تھا کہ ’میں نے ٹی وی پر سنا کہ فیصلے میں لکھا ہے کہ استغاثہ کرپشن کا کوئی الزام ثابت نہیں کرسکی، مجھے جو سزا دی گئی وہ پاکستان کی 70 سالہ تاریخ کا رخ موڑنے کے جرم میں دی گئی، لیکن یہ سزائیں میرے عزم کو نہیں توڑ سکتیں، میں ووٹ کو عزت ملنے تک اور عوام کو ان کا حقِ حکمرانی دلوانے تک جدوجہد جاری رکھوں گا اور ووٹ کی عزت کے لیے ہر قیمت چکاؤں گا۔‘نواز شریف نے وطن واپسی کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ’میں اپنی جدوجہد جیل میں بھی جاری رکھوں گا، جبر کے باوجود مسلم لیگ (ن) تمام جماعتوں سے آگے ہے، مسلم لیگ (ن) 2018 کے انتخابات میں فتح یاب ہوگی اور عوام 25 جولائی کو ووٹ کے ذریعے زنجیریں توڑ دیں گے۔‘ادھر نیب کی جانب سے بیان جاری کیا گیا ہے کہ نواز شریف اور مریم کو وطن واپس آتے ہی ایئر پورٹ سے گرفتار کر لیا جائے گا ۔

فیس بک کمینٹ

متعلقہ تحریریں

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker