اہم خبریں

اشرف غنی افغانستان سے فرار : کابل کی سکیورٹی جنگجوؤں نے سنبھال لی

کابل : افغان صدر اشرف غنی عوام کو طالبان کے رحم و کرم پر چھوڑ کر تاجکستان فرار ہو گئے ہیں ۔ افغانستان کی اعلیٰ قومی مصالحتی کونسل کے چیئرمین عبداللہ عبداللہ نے سوشل میڈیا پر جاری کیے گئے اپنے ایک ویڈیو بیان میں اس بات کی تصدیق کی ہے کہ افغان صدر اشرف غنی ملک چھوڑ کر چلے گئے ہیں۔عبداللہ عبداللہ کا مزید کہنا تھا کہ ’خدا اُن کے ساتھ حساب کرے گا‘
خبر رساں ادارے روئٹرز کو افغان وزارتِ دفاع کے ایک اعلیٰ اہلکار نے بھی اس خبر کی تصدیق کی ہے۔ادھر بی بی سی فارسی کو موصول ہونے والی تازہ ترین اطلاعات کے مطابق طالبان افغانستان کے صدارتی محل میں داخل ہو گئے ہیں۔
طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کا کہنا ہے کہ انھوں نے اپنے جنگجوؤں کو کابل میں داخل ہونے کی اجازت دے دی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ’شہر میں لوٹ مار روکنے اور بدامنی سے بچنے کے لیے کابل کی سکیورٹی سنبھالنے کے احکامات دیے ہیں۔‘ذبیح اللہ مجاہد کی جانب سے جاری اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ ’ہم نے صبح جاری کیے گئے ایک بیان میں کہا تھا کہ ہم اپنے جنگجوؤں کو شہر میں داخل ہونے کی اجازت نہیں دے رہے تھے لیکن کیونکہ کابل میں سکیورٹی اہلکاروں اور پولیس کی جانب سے اہم مقامات چھوڑ دیے گئے ہیں جس کے باعث اب شہر میں غیر یقینی صورتحال ہے اور اس سے بچنے کے لیے ہم نے جنگجوؤں کو شہر میں داخل ہو کر سکیورٹی سنبھالنے کی ہدایت کی ہے۔‘

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker