اختصارئےعابد میرلکھاری

عابد میر کا اختصاریہ :عورت مارچ اور بلوچستان اسمبلی کی ”مردانگی“

بلوچستان اسمبلی کبھی بھی عورت دوست نہیں رہی۔ آمر پرویز مشرف کے 33 فیصد والے فارمولے سے قبل تو یہاں عورتوں کی شکل ہی کم دیکھی جاتی تھی۔ یوں بھی کمرے اور کچن کو عورت کا مقدر سمجھنے والے ہمارے باغیرت مردوں کی غیرت کہاں گوارا کرتی تھی کہ یہ عورت کچن سے نکل کر ان کے برابر اسمبلی میں آ کر بیٹھے۔ ہاں 33 فیصد کوٹے کے بعد یہاں بھرتی کرنے کے لیے بھی سب کو اپنی رشتے دار ہی نظر آئیں۔ آٹھ پردوں میں لپٹا کر وہ انھیں اسمبلی میں حاضری رجسٹر پر دستخط کروانے اور تنخواہ وصول کروانے کو لانے لے جانے لگے۔
ابھی جب کچھ سال پہلے راحیلہ درانی اسپیکر اسمبلی بنیں تو سب اراکین نے ناک بھوں چڑھائی کہ جس عورت ذات کو وہ منہ نہ لگاتے ہوں اب اسمبلی میں اس سے اجازت لے کر بات کرنی پڑے گی۔ ایک غیرت مند سردار نے ایک تو اجلاس میں کہہ دیا کہ ایک تو آپ عورت ہیں، آپ سے کیا بات کی جائے۔ سابق وزیراعلیٰ نواب کی خاتون وزیر کو، ” بمبو کرنے“ کی وضاحت فحش اشاروں سے کرنے والی وڈیو تو اب بھی سوشل میڈیا پہ دیکھی جا سکتی ہے۔
اب ماشاءاللہ اس اسمبلی نے عورت مارچ کے خلاف باقاعدہ قرارداد بھی منظور کر لی، یہ مارچ اب تک بلوچستان میں تو خیر ہو ہی نہیں سکا، مگر جہاں ہو رہا ہے، انھیں وہاں بھی اس کے ہونے سے تکلیف ہے۔ اور تکلیف کیوں نہ ہو کہ انھیں اپنی صدیوں کی حاکمیت خطرے میں جو محسوس ہو رہی ہے، سو چیخیں گے تو سہی، چلائیں گے تو سہی۔ مگر چیخنے چلانے سے، زور زبردستی سے تاریخ کا دھارا بھلا کب بدلا ہے!
ملاحظہ کیجیے، وہ اسمبلی جہاں کبھی بڑھتی ہوئی غربت، بے روزگاری، گمشدگی پہ قراردار پاس نہیں ہوئی، وطن کے وسائل بے دردی سے لٹنے کی قرارداد پیش نہ ہوئی، وہاں عورت مارچ کے خلاف قرارداد پیش بھی ہوئی اور پاس بھی ہو گئی۔ یعنی عورت دشمنی کے معاملے پر ہمارا بنیاد پرست ملا، لبرل مزاج فیوڈل، سیکولر قوم پرست، دھرتی بیچ کھانے والا غیرت مند سردار، سب کے سب ایک پیج پر ہیں۔ عورت دشمنی اور عوام دشمنی ان سب کا مشترکہ ایجنڈا ہے۔
یہ قراردار دراصل عورت مارچ کے خلاف نہیں، بلوچ سماج کے سیکولر مزاج کی دعوے داری کے خلاف منظور ہوئی ہے۔ دیکھتے ہیں خود کو عورت دوست کہنے والا سماج اس پہ کیا ردعمل دکھاتا ہے۔
بلوچستان اسمبلی نے تو اپنی فاتحہ کی قراردار پاس کر لی ہے۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker