اہم خبریں

روزنامہ جنگ ملتان میں ڈاؤن سائزنگ کی تیاریاں : صحافتی تنظیموں کا احتجاج

ملتان : روزنامہ دنیا ، روزنامہ ایکسپریس اور روزنامہ نوائے وقت کے بعد روزنامہ جنگ ملتان میں بھی ڈاﺅن سائزنگ کی تیاریاں مکمل ہوگئی ہیں۔ ذرائع کے مطابق دنیا ،ایکسپریس اور نوائے وقت کی طرز پر جنگ ملتان کوبھی محدود سٹاف کے ساتھ شائع کیا جائے گا۔ ملتان کے لیے کراچی آفس میں الگ ڈیسک قائم کردیاگیاہے جہاں ملتان سے گئے ہوئے سٹاف نے ذمہ داریاں بھی سنبھال لی ہیں۔جب کہ مزید سٹاف بھی کراچی بھیج دیا جائے گا ۔
لاہور سے ایک ٹیم بھی ملتان پہنچ رہی ہے تاکہ جس سٹاف کو فارغ کیاجارہا ہے اس کے واجبات ادا کیے جاسکیں۔ معلوم ہوا ہے کہ جنگ ملتان کو تین سے چار رپورٹروں اور دو سے تین سب ایڈیٹرز کے ذریعے تیار کیاجائے گا ۔ میگزین سیکشن اور جنگ فورم ، کمپیوٹر سیکشن بھی ختم کیے جانے کا امکان ہے۔
دریں اثناءپاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس ،انجمن صحافیان سمیت مختلف صحافتی تنظیموں نے اخباری کارکنوں کے معاشی قتل پر احتجاج کیا ہے۔الیکٹرانک میڈیا رپورٹرز ایسوسی ایشن (ایمرا) کے صدر محمد آصف بٹ اور سیکرٹری ایمرا سلیم شیخ نے روزنامہ ملتان سے 60 ورکرز کی ممکنہ برطرفی کی اطلاعات پر شدید غم وغصہ کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سے قبل دنیا نیوز ، نوائے وقت بھی صحافتی کارکناں پر شب خون مار چکے ہیں اور روزنامہ ایکسپریس نے بھی ملتان سے اپنے کارکنوں کو فارغ کیا تھا ۔صحافتی مالکان کی آپس کی ملی بھگت سے بے روزگاری پھیل رہی ہے اور ہمارے کارکنوں نے اپنی ساری عمر میڈیا انڈسٹری کو دی۔ مالکان کے ہر کام تحفظ کیا ہے اور میڈیا کارکناں کے نام پر ملنے والی سہولیات لیکر مالکان اربوں پتی بن چکے ہیں ۔ہم ان کے ورکرز دشمن اقدامات کو مسترد کرتے ہیں۔انہوں نے کہا دنیا سمیت ایسے تمام اداروں کی تقریبات کا بھی بائیکاٹ کیا جائے گا

فیس بک کمینٹ
Tags

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker