اہم خبریں

چہیتے بیوروکریٹ اعظم خان کی من مانیوں پروزیراعظم عمران خان کی چشم پوشی کیوں؟

اسلام آباد: سپریم کورٹ اور اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کے قواعد دھجیاں اڑاتے ہوئے وزیراعظم کے لاڈلے سیکرٹری اعظم خان نے اپنے سسرالی ڈی ایم جی افسر جہانزیب خان کو تین سال کی مدت ملازمت میں توسیع دلوا دی ہے۔ جہانزیب خان نے کل یکم اگست کو ریٹائر ہونا تھا ۔ اعلی افسران کا کہنا ہے کہ اگر اعظم خان نے اپنے اس رشتہ دار کو توسیع دینا ہی تھی تو وہ ان کو فیڈرل پبلک سروس کمیشن یا صوبائی پبلک سروس کمیشن میں چیئرمین یا ممبر لگوا دیتے مگر اس طرح کسی کو تین سال کی مدت میں توسیع دے کر اسی عہدے پر قائم نہیں رکھا جا سکتا۔۔
قبل ازیں خیبرپختونخواہ کے ایک سابق چیف سیکرٹری امجد خان نے اپنی ریٹائرمنٹ کے قبل کوشش کی تھی کہ مدت ملازمت میں توسیع مل جائے مگر اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے سپریم کورٹ کے فیصلے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ آپ کو ایک دن بھی توسیع نہیں مل سکتی جس کے بعد موصوف کو گھر جانا پڑا۔
ایک سینئر بیوروکریٹ نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر کہا کہ اس بار تمام بیوروکریسی حیران ہے کہ اعظم خان کس طرح اپنی ذات کو ناجائز فوائد دے رہے ہیں۔ تیس جولائی کو انہوں نے اپنے بھائی اصغر خان کو کسٹم میں ایک اعلی پوسٹ سے ہٹا کر دوسری کماؤ پوسٹ پر لگا دیا جہاں جانے کے لیئے کسٹم افسران کی ایمانداری اور قابلیت ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ اعظم خان نے ساری بیوروکریسی کے ناک میں دم کر رکھا ہے۔خدا معلوم وزیر اعظم عمران خان اعظم خان کی ان حرکتوں سے چشم پوشی کیوں کر رہے ہیں ۔

فیس بک کمینٹ

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker