2018 انتخاباتاہم خبریں

نواز شریف کا استقبال روکنے کے لئے راستے بند : سیکڑوں کارکن گرفتار

لاہور : پولیس نے مسلم لیگ (ن) کے تاحیات قائد اور سابق وزیراعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کے استقبال کی تیاریاں کرنے والے مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں کے خلاف کریک ڈاؤن کرتے ہوئے 300 سے زائد کارکنوں کو گرفتار کرلیا، گرفتار افراد میں یونین کونسل کے چیئرمین، وائس چیئرمین اور کونسلرز بھی شامل ہیں۔لاہور پولیس کے ذرائع نے ڈان ٹی وی کو بتایا کہ ڈسٹرکٹ کمشنر کی جانب سے300 سے زائد لیگی کارکنوں کی فہرست دی گئی تھی جنہیں گرفتار کرلیا گیا ہے۔میاں نواز شریف اور مریم نواز جمعرات کی شب ہیتھرو ایئر پورٹ سے لاہور کے لیے روانہ ہوگئے تھے، دونوں رہنما بذریعہ ابو ظہبی جمعہ کی شام لاہور ایئر پورٹ پر پہنچیں گے۔ڈپٹی انسپکٹر جنرل (ڈی آئی جی) آپریشنز نے بتایا کہ لاہور میں امن و امان کی صورتحال قابو میں رکھنے کے لیے دس ہزار پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا ہے۔اس کے علاوہ حساس ادارے، اسپیشل برانچ، ڈولفن فورس اور اسپیشل یونٹ کے اہلکار بھی لاہور کے حساس علاقوں میں تعینات کیے جائیں گے۔لاہور ٹریفک پولیس کے مطابق لاہور کے اہم داخلی و خارجی راستوں کو رات گئے کنٹینرز لگا کر بند کردیا گیا ہے۔ڈی آئی جی پنجاب اکبر کا کہنا تھا کہ تمام پولیس افسران کو ہدایت کی گئی ہے کہ انتخابی مہم کے دوران شرپسندی پھیلانے والوں سے سختی سے نمٹا جائے۔انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق پر عمل کرنے والے سیاسی کارکنوں کو ہر ممکن تحفظ فراہم کیا جائے گا۔ذرائع کے مطابق لاہورایئر پورٹ پر جمعہ کو سخت سیکیورٹی انتظامات کیے جائیں گے، خاردار تاروں اور کنٹینرز سے راستے بند کردیے جائیں گے، سابق وزیر اعظم کی آمد کے موقع پر ایئرپورٹ پر صرف مسافروں اور ملازمین کو داخلے کی اجازت ہوگی۔
( بشکریہ : ڈان نیوز )

فیس بک کمینٹ

متعلقہ تحریریں

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker