اختصارئےحسنین رضویلکھاری

رویت ہلال کا معاملہ عوام پر چھوڑ دیں ۔۔ حسنین رضوی

ہم ایک طویل عرصے سے چاند دیکھنے کے مسئلے میں پھنسے ہوئے ہیں ۔ کم ازکم پاکستان میں یہ مسئلہ 30 ، 35 سال سے حل طلب ہے ۔ اس دوران حکومتیں آتی جاتی رہیں جن میں سول اور فوجی دونوں طرح کی حکومتیں شامل ہیں لیکن یہ مسئلہ حل نہ ہوسکا ۔دنیا کے مسلم ممالک کی تعداد اس وقت 70 سے زائدہے ان 70 سے زائد ممالک میں سے صرف چند ممالک ایسے ہیں جہاں ” رویت ہلال “ کو سرکاری سطح پر کوئی اہمیت دی جاتی ہے ورنہ اکثر مسلم ممالک میں اس مسئلے کو کوئی اہمیت نہیں دی جاتی ۔ وہاں یہ مسئلہ عوام پر چھوڑ دیا گیا ہے جس کو چاند نظر آجائے وہ عید یا روزہ رکھ لے جس کو نظر نہ آئے وہ عید نہ منائے ریاست کا اس مسئلے سے کوئی تعلق نہیں … کیونکہ وہاں کی بالغ نظر حکومتوں نے بہت پہلے یہ بھانپ لیا تھا کہ مسلمان دین کے معاملے میں کسی بھی مسئلے میں ” متفق ” نہیں۔ یہاں تک کہ ہر مسجد میں نماز اور اذان کی ٹایمنگ تک میں اتفاق نہیں ہوتا تو ایسے نہ حل ہونے والے مسئلے میں الجھنے اور وقت ضائع کرنے کا کوئی فائدہ نہیں … یہ مسئلہ عوام کی صوابیدید پر چھوڑ دیا جائے اور ریاست اس سے دور ہوجائے ۔اب چونکہ پاکستان کی مرکزی رویت ہلال کمیٹی سے مفتی منیب کی چھٹی ہوچکی ہے اور نئے چیرمین کی تقرری ہوچکی ہے لیکن یہ مسئلے کا حل نہیں ۔وزارت سائنس و ٹیکنالوجی کی طرف سے رویت ہلال کا 5 سالہ کیلینڈر تیار کرنے کا بھی اعلان کیا گیا ہے جسے کابینہ میں پاس کرکے نافذ کیا جائے گا … لیکن اس کی کیا گارنٹی ہے کی مولوی حضرات اسے تسلیم کرلیں گے اور اگر بزور طاقت نافذ کیا گیا تو کیا موجودہ کمزور حکومت یہ کر سکے گی… یہ ایسے سولات ہیں جن کا جواب کسی کے پاس نہیں ۔بادی النظر میں اس مسئلے کا آسان ترین حل یہی ہے کہ اس مسئلے کو عوام کی صوابیدید پر چھوڑ دیا جائے جیسا کہ اکثر ممالک میں کیا جاتا ہے … جسے چاند نظر آجائے وہ عید منا لے جسے نظر نہ آئے وہ روزہ رکھ لے ریاست کا اس سے کوئی لینا دینا نہیں . موجودہ حکومت کو بہت بڑے بڑے چیلنجز درپیش ہیں اس طرح کے نہ حل ہونے والے مسائل میں پھنسنے سے بہتر ہے اس مسئلے کو اہمیت ہی نہ دی جائے جتنی اس مسئلے پر مغز ماری کی جائے گی یہ اور پیچیدہ اور اختلافی بنتا جائے گا لہذا بہتر یہ ہی ہوگا کہ بھینس کے آگے بین بجانے کی بجائے اس مسئلے کو عوام کی صوابیدید پر چھوڑ کر ریاست اس سے دور ہوجائے۔

فیس بک کمینٹ
Tags

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker