تجزیےعمران عثمانیکھیللکھاری

فتح سے آغاز،کامیابی پر اختتام :کوئٹہ کا کھیل پھر بھی تمام ۔۔ عمران عثمانی کا تجزیہ

نیشنل اسٹیڈیم کراچی میں دفاعی چیمپئن کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے پی ایس ایل 2020 کا آغاز افتتاحی میچ 2 مرتبہ کی پی ایس ایل چیمپئن اسلام آباد یونائیٹڈ کیخلاف جیت کر کیا آغاز کیا اور پھر پاکستان کے اگلے 3 مقامات لاہور، ملتان اور راولپنڈی سے ہوتی ہوئی آخری میچ کیلئے دوبارہ کراچی پہنچی اور میزبان ٹیم کو 5 وکٹ سے ہرا کر کیا یادگار اختتام کیا.
پی ایس ایل 2020 کی افتتاحی و آخری لیگ میچ کی چیمپئن سرفراز الیون کے ساتھ یہ ہوا کیا؟
اتنی اچھی اڑان،اتنی اعلی لینڈ نگ کے باوجود فتح کے ساتھ نیشنل اسٹیڈیم کراچی سے نکلنے والی ٹیم فائنل 4 سے کیسے باہر ہوگئی کیونکہ اس کے پوائنٹس کم تھے ؟کیونکہ اس کا نیٹ رن ریٹ پشاور زلمی سے بہت نیچے تھا. سرفراز الیون کے پاس بتانے کو یہ جواز کافی ہے ؟
ہرگز نہیں ،کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ناکامی کے اسباب اور ان واقعات کا جائزہ پھرلیں گے جن کی وجہ سے آج یہ حالات ہوئے.
اس وقت پیش خدمت ہے آخری لیگ میچ کا تفصیلی احوال.
پی ایس ایل 2020 کے آخری گروپ میچ میں کوئٹہ گلڈی ایٹرز نے کراچی کنگز کو 5 وکٹوں سے شکست دے دی۔ میچ میں کامیابی کے باوجود دفاعی چیمپئن ٹیم کم رن ریٹ کے باعث سیمی فائنل میں رسائی حاصل نہ کرسکی۔نیشنل اسٹیڈیم میں گلیڈی ایٹرز نے 151 رنز کا ہدف 17ویں اوور میں 5 وکٹوں کے نقصان پر حاصل کرلیا۔ شین واٹسن اور خرم منظور نے نصف سنچریاں بنائیں۔سیمی فائنل میں رسائی کے لیے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو مطلوبہ ہدف 20 گیندوں پر حاصل کرنا تھا جو نا ممکن تھا.
کراچی کنگز کے کپتان بابراعظم نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا 30 رنز پر ابتدائی دو وکٹیں (شرجیل خان 0 اور افتخار احمد21) گنوانے کے بعد کراچی کنگز کے کیمرون ڈیلپورٹ نے میدان کا رخ کیا۔ انہوں نے اوپنر بابراعظم اور مڈل آرڈر بلے باز چیڈوک والٹن کے ہمراہ بالترتیب 42 اور73 رنز کی شراکت قائم کرکے ٹیم کا مجموعہ 150 کے پاس پہنچایا۔
کیمرون ڈیلپورٹ نے 44 گیندوں پر 5 چوکوں اور 2 چھکوں کی مدد سے 62 رنز کی اننگز کھیلی۔ بابراعظم 32 اور چیڈوک والٹن 26 رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔ کراچی کنگز نے مقررہ 20 اوورز میں 5 وکٹوں پر 150 رنز بنائے۔ اسامہ میر 1 اور محمد رضوان بغیر کوئی رنز بنائے کریز پر موجود رہے۔کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے نسیم شاہ نے 2 جبکہ فواد احمد، محمد حسنین اور سہیل خان نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔
مطلوبہ ہدف کے تعاقب میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے اوپنر احمد شہزاد بغیر کوئی رنز بنائے پویلین واپس لوٹے تو شین واٹسن نے خرم منظور کے ہمراہ جارحانہ انداز اپناتے ہوئے 118 رنز کی شراکت قائم کی۔
شین واٹسن نے194 کے اسٹرائیک ریٹ کے ساتھ7 چوکوں اور 4 چھکوں کی مدد سے 66رنز بنائے۔ خرم منظور 9 چوکوں اور 1 چھکے کی مدد سے 63رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے 16.2 اوورز میں 5 وکٹوں کے نقصان پر 154 رنز بناکر فتح حاصل کرلی۔کراچی کنگز کے ارشد اقبال اور وقاص مقصود نے 2،2 جبکہ علی خان نے ایک وکٹ حاصل کی۔شین واٹسن کو مین آف دی میچ قرار دیا گیا۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker