اہم خبریں

نوازشریف اپنے قدموں پرچل کر لندن روانہ ہوگئے

لاہور : سابق وزیر اعظم نوازشریف اپنے قدموں پرچل کر علاج کے لیے لندن روان ہوگئے۔ میاں نوازشریف کی جاتی امرا سے ائیرپورٹ روانگی کے وقت ایمبولینس اور سیکیورٹی کی گاڑیاں بھی ساتھ تھیں۔ سابق وزیراعظم کو لینے کے لیے آنے والی قطر ائیرویز کی ائیر ایمبولینس لاہور ائیرپورٹ پر موجود تھے جو صبح پونے 9 بجے کے قریب لاہور کے علامہ اقبال ائیرپورٹ پہنچی، ائیر ایمبولینس براہ راست لندن تک پرواز کرسکتی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ائیر ایمبولینس شریف فیملی کی جانب سے کرائے پرحاصل کی گئی ہے، ائیر ایمبولینس قطر کی ہے جو ائیر بس طیارے میں بنایا گیا ہے، ائیر ایمبولینس میں اسٹریچر کے علاوہ ڈاکٹرز اور پیرامیڈکس اسٹاف ہوتا ہے اور یہ ائیر ایمبولینس براہ راست لندن تک پرواز کرسکتی ہے۔۔ نوازشریف کی روانگی کے لیے علامہ اقبال انٹرنیشنل ائیرپورٹ انتظامیہ نے بھی تیاری مکمل تھیں۔ مریم اورنگزیب نے بتایا کہ ائیرایمبولینس میں آئی سی یو اور آپریشن تھیٹر کی سہولت موجود ہے، سفر پر روانگی سے قبل ڈاکٹرز نے نواز شریف کا تفصیلی معائنہ کیا اور انہیں دوران سفر خطرات سے بچانے کےلیے اسٹیرائیڈز کی ہائی ڈوز دی گئی ہیں۔ نوازشریف کی لندن روانگی کے موقع پر جاتی امرا سمیت ائیرپورٹ جانے والے تمام راستوں پر سیکیورٹی کے غیر معمولی انتظامات کیے گئے۔ مسلم لیگ (ن) نے کارکنان کو ائیرپورٹ آنے سے روک دیا ہے جب کہ پارٹی کے 21 سینئر رہنماو¿ں کو حج لاو¿نج تک آنے کی اجازت دی گئی ہے جن میں راجہ ظفرالحق ، احسن اقبال، خواجہ آصف، مریم اورنگزیب اور عظمیٰ بخاری سمیت دیگر رہنما شامل ہیں۔ وزارت داخلہ نے لاہورہائی کورٹ کے حکم کی مصدقہ نقل ملنے کے بعد نوازشریف کو ایک بار کیلئے بیرون ملک جانے دینے کا ہدایت نامہ جاری کردیا ہے۔ وزارت داخلہ کی جانب سے نواز شریف کو باہر جانے کی اجازت کا میمورنڈم بھی جاری کردیا گیا ہے میمورنڈم کے مطابق عبوری انتظام کےتحت نوازشریف کوباہرجانےکی ایک بار اجازت دینےکافیصلہ کیاگیا ہے اور انہیں 4 ہفتوں کے لیے بیرون ملک علاج کی غرض سے جانے کی اجازت لاہورہائی کورٹ کے حکم پردی گئی ہے۔ وزارت داخلہ کے میمورنڈم میں شہبازشریف اور نوازشریف کی جانب سے لاہور ہائی کورٹ میں جمع کروائے گئے بیان حلفی کا بھی حوالہ شامل ہے۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker