اہم خبریں

جمعہ کے اجتماعات ہوں گےیا نہیں ؟ فیصلہ کل ہو گا : بچوں اور بزرگوں کو مساجد نہ جانے کی ہدایت

اسلام آباد: اسلامی نظریاتی کونسل نے کہا ہے کہ علمائے کرام نمازجمعہ کے اجتماعات کو مختصر کریں اور بزرگ و بچے مساجد میں نہ جائیں۔ ایکسپریس نیوز کے مطابق وفاقی وزیر مذہبی امور نورالحق قادی نے نماز جمعہ اور دیگر مذہبی اجتماعات سے متعلق علمائے کرام سے مشاورت کی تھی، جس پر علما نے اپنی سفارشات وفاقی وزیر کو دے دی ہیں۔
چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل ڈاکٹر قبلہ ایاز کا کہنا ہے کہ کونسل نے مذہبی اجتماعات سے متعلق سفارشات تیار کر لی ہیں، جس میں کہا گیا ہے کہ ملک میں جاری مذہبی اجتماعات ملتوی کیے جائیں، فی الحال مساجد بند کرنے یا نماز جمعہ کی ادائیگی پابندی کی کوئی صورتحال نہیں، تاہم نماز جمعہ کے اجتماع میں بیانات کے بجائے مختصر خطبہ دیا جائے، جمعہ کے اجتماعات مختصر ہوں، بچے اور بزرگ افراد مسجد نہ جائیں۔
چیئرمین کونسل قبلہ ایاز نے کہا ہے کہ اسلامی نظریاتی کونسل کی سفارشات کل وفاقی کابینہ اجلاس میں پیش کی جائیں گی، اور نماز جمعہ کے اجتماعات پر حتمی فیصلہ حکومت نے کرنا ہے، لیکن صورتحال خراب ہونے پر نماز جمعہ کے اجتماع پر پابندی عائد ہوئی تو اس پر عمل کرنا ضروری ہے۔
ادھر کورونا وائرس کے پیش نظروزیراعظم نے مذہبی اجتماعات پرپابندی کے لیے مولانا طارق جمیل سے کردارادا کرنے کی درخواست کی ہے۔وزیراعظم عمران خان سے معروف عالم دین مولانا طارق جمیل نے وزیراعظم آفس میں ملاقات کی۔ وزیراعظم عمران خان نے ملاقات میں کورونا وائرس کی روک تھام سے متعلق گفتگوسمیت قومی سلامتی کمیٹی کے فیصلوں پربات چیت کی۔
وزیراعظم نے موجودہ صورتحال سے متعلق مولانا طارق جمیل سے خصوصی دعاؤں کی بھی درخواست کی۔ وزیراعظم نے کورونا وائرس کے پیش نظرمذہبی اجتماعات پر پابندی کے لیے مولانا طارق جمیل سے کردار ادا کرنے کی بھی درخواست کی۔
ذرائع کے مطابق مولانا طارق جمیل کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے احتیاطی تدابیر سے متعلق بیان بھی جاری کریں گے۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker