اہم خبریں

ملک بھر میں لاک ڈاؤن : وزیر اعظم کا معاشی پیکیج ، پٹرول پندرہ روپ سستا

اسلام آباد : پاکستان میں کورونا وائرس سے اب تک مجموعی طور پر 7 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں جب کہ ملک بھر میں کیسز کی تعداد 916 ہوگئی ہے۔آج ملک میں مجموعی طور پر 32 کیسز رپورٹ ہوئے جن میں سے پنجاب میں 19 اور سندھ میں 13 افراد میں مہلک وائرس کی تصدیق ہوئی۔
نئے کیسز کی تصدیق کے بعد ملک بھر میں متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 916 تک جاپہنچی ہے جبکہ مہلک وائرس سے اب تک 10 افراد صحتیاب ہوچکے ہیں جن میں سے گلگت بلتستان اور سندھ میں 4، 4 اور 2 کا تعلق اسلام آباد سے ہے۔ملک کے سب سے زیادہ آبادی والے صوبے پنجاب میں آج کورونا وائرس سے پہلی ہلاکت ہوئی ہے جس کے بعد ملک میں انتقال کرجانے والے افراد کی تعداد 7 تک جاپہنچی ہے۔
اس سے قبل خیبرپختونخوا میں 3، بلوچستان، گلگت بلتستان اور سندھ میں ایک ایک مریض جاں بحق ہوا ہے۔
پاکستان میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد میں مسلسل اضافے کے بعد ملک بھر میں فوج تعینات ہے اور چاروں صوبے لاک ڈاؤن کا اعلان کرچکے ہیں۔وزارت داخلہ کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق گلگت بلتستان، آزاد کشمیر میں بھی فوج تعینات کی گئی ہے اور فوج کی خدمات آئین کے آرٹیکل 131 اے کے تحت طلب کی گئی ہیں۔
ادھر وزیر اعظم عمران خان نے کورونا وائرس کی وجہ سے بننے والی صورت حال سے نمٹنے کے لیے معاشی پیکیج کا اعلان کر دیا ہے۔پیکیج میں لیبر کے لیے دو سو ارب کے امداد کے علاوہ پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں پندرہ روپے فی لیٹر کمی کا اعلان بھی شامل ہے۔
اعلان منگل کو وزیر اعظم عمران خان نے اسلام اباد میں سینیئر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔
ان کا کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن ایک مشکل فیصلہ تھا۔ دو سو ارب کے پیکیج کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ ہم صوبوں کے ساتھ بھی بات چیت کر رہے ہیں تاکہ اس کو مزید موثر بنایا جا سکے۔انڈسٹری، امپورٹ اور ایکسپورٹ کو فوری طور پر سو ارب روپے کے ٹیکس ریفنڈ دیے جائیں گے۔ سمال اور میڈیم انڈسٹری کے لیے سو ارب روپے رکھے گئے ہیں، آسان اقساط پر قرضے بھی دیے جائیں گے۔عمران خان نے کہا کہ ڈیڑھ سو ارب روپے کا فنڈ ہے جو چار مہینے میں تین ہزار روپے فی خاندان تقسیم کیے جائیں گے۔ یوٹیلٹی سٹورز کو مزید پچاس ارب روپے دے جا رہے ہیں۔’پچاس ارب روپے میڈیکل ورکرز کے لیے رکھے گئے ہیں۔ بجلی اور گیس کے بلوں میں بھی صارفین کو ریلیف دیا جائے گا۔ تین سو یونٹ خرچ کرنے والے صارف تین مہینے کی قسط میں بل دے سکیں گے۔‘

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker