اہم خبریں

آئین توڑنے والے محب وطن ہیں یا غدار ؟ : گوجرانوالہ جلسے میں نواز شریف کا سوال

گوجرانوالہ : سابق وزیر اعظم اور مسلم لیگ ن کے تاحیات قائد محمد نواز شریف نے گوجرانوالہ میں جلسے کے شرکا سے خطاب میں سوال اٹھایا ہے کہ سویلین حکومتوں کو ان کی مدت مکمل کرنے کیوں نہیں دی جاتی۔
پاکستان میں حزب اختلاف کی جماعتوں کا اتحاد، پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کا حکومت کے خلاف اعلان کردہ تحریک کا پہلا جلسہ گوجرانوالہ کے جناح سٹیڈیم میں ہوا ۔ پاکستان کے مقامی وقت کے مطابق رات سوا گیارہ بجے نواز شریف نے لندن سے اپنی تقریر میں ملک میں مہنگائی، ترقیاتی منصوبوں، سول ملٹری تعلقات، انتخابات میں مبینہ دھاندلی اور سیاستدانوں کو ’غدار‘ کہلائے جانے جیسے مختلف موضوعات پر بات کی۔۔
نواز شریف نے اپنی تقریر میں کہا کہ تمام سیاستدانوں کو ’غدار‘ کہلایا جاتا ہے اور شروع سے فوجی آمر سیاست دان جیسے فاطمہ جناح، باچا خان، شیخ مجیب الرحمان اور دیگر رہنماؤں کو غدار قرار دیتے رہے ہیں۔انھوں نے اپنی تقریر میں الزامات لگایا کہ پاکستان میں انتخابات میں مینڈیٹ کو ’چوری‘ کیا گیا اور ’دھاندلی‘ کی گئی۔انھوں نے اپنی تقریر میں فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے سابق سربراہ اور وزیر اعظم کے سابق معاون خصوصی برائے میڈیا لیفٹننٹ جنرل ریٹائیرڈ عاصم باجوہ کے خلاف حال میں لگنے والے الزامات کا بھی ذکر کیا۔
نواز شریف نے سیاستدانوں پر غداری کے الزامات لگائے جانے پر کہا کہ ’پاکستان میں محب وطن کہلائے جانے والے وہ ہیں جنھوں نے آئین کی خلاف ورزی کی اور ملک توڑا‘۔اس سے قبل اپوزیشن کی دو بڑی جماعتوں مسلم لیگ نواز کی مریم نواز اور پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے خطاب کیا ۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker