اختصارئےپنجابکتب نمالکھارینیرہ نور خالد

نو اپریل 1985ء : گورنر جیلانی نے نواز شریف سے وزیر اعلی پنجاب کا حلف لیا :آج کا دن /نیرہ نور خالد

نو اپریل 1985ء وہ دن تھا جب سابق ڈی جی آئی ایس آئی اور پنجاب کے 14 ویں گورنر جنرل جیلانی نے نواز شریف سے وزیر اعلی پنجاب کا حلف لیا۔
نوازشریف کی سیاسی تربیت پاکستان کے فوجی آمر جنرل محمد ضیاءالحق کے زیر سایہ ہوئی۔ ضیاء دور میں وہ لمبے عرصے تک پنجاب حکومت میں شامل رہے۔ وہ کچھ عرصہ پنجاب کی صوبائی کونسل کا حصہ رہنے کے بعد 25 اپریل 1981ء کو پنجاب کی صوبائی کابينہ ميں بطور وزيرِخزانہ شامل ہو گئے۔ وہ 28 فروری 1985 تک وزیر خزانہ پنجاب رہے ۔آمریت کے زیرِ سایہ 1985ء میں ہونے والے غیر جماعتی انتخابات ميں مياں نواز شریف قومی اور صوبائی اسمبليوں کی سيٹوں پہ بھاری اکثريت سے کامياب ہوئے۔ 9 اپريل 1985ء کو انھوں نے پنجاب کے وزيرِاعلٰی کی حيثيت سے حلف اٹھايا۔
31 مئی 1988ء کو جنرل ضياءالحق نے جونیجو حکومت کو برطرف کر دیا تاہم مياں نواز شريف کو نگران وزیراعلٰی پنجاب کی حیثیت سے برقرار رکھا گیا۔ یہ امر نوازشریف کے جنرل ضیاء سے قریبی مراسم کی نشان دہی کرتا ہے۔ اور یہ تو سب جانتے ہیں جنرل ضیاء نے ایک بار نواز شریف کو اپنی عمر لگ جانے کی دعا بھی دی تھی ۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker