اہم خبریں

بورے والا : اردو اور پنجابی کے نام ور شاعر محمود غزنی انتقال کر گئے

بورے والا ۔ اردو اور پنجابی کے نام ور شاعر محمود غزنی اتوار کے روز حرکت قلب بند ہو جانے سے انتقال کر گئے ۔ ان کی عمر 65 برس تھی ۔
معروف محقق طارق نواز خان کی کتاب ” مشاہیر وہاڑی “ کے مطابق محمودغزنی 16اکتوبر1956ء کو بوریوالامیں پیداہوئے۔ایم سی ہائی سکول بوریوالامیں تعلیم حاصل کی۔اسی دوران شاعری کاآغازکیا۔1972ء میں اسی سکول سے میٹرک کاامتحان پاس کیا،انٹرمیڈیٹ کے لیے گورنمنٹ ڈگری کالج بوریوالامیں داخلہ لیا۔1973ء میں گورنمنٹ کالج فیصل آباد میں انٹرکالجیٹ مشاعرے میں شرکت کی اورنام ور شاعر احمد فرازسے پہلاانعام حاصل کیا۔1974ء میں گورنمنٹ کالج لاہور کے مشاعرے میں دوسراانعام حاصل کیا۔1974ء میں ایف اے کاامتحان پاس کیااوربعدازاں پی ٹی سی اورفنی مہارت کے ڈپلومے حاصل کئے۔
1980ء میں محمود غزنی نے گورنمنٹ پرائمری سکول سے تدریسی کیریئرکاآغازکیا۔چک 325میں بھی تدریسی خدمات انجام دیں اورپھر طویل عرصہ تک گورنمنٹ پرائمری سکول حبیب کالونی بوریوالامیں تدریس سے منسلک رہے۔ان کاواحد شعری مجموعہ ”دشت کاتنہاسفر“ 1994ء میں شائع ہوا۔وہ ادبی تنظیم” کشف “کے صدر اور”مجلس میاں محمد بخش” کے نائب صدر تھے۔ان کے پسماندگان میں 5بیٹیاں اور2بیٹے شامل ہیں۔
محمود غزنی کی معروف غزلوں میں سے دو غزلیں قارئین کی نذر
اک ملاقاتِ سرِ راہ سے پہلے مرنا
کتنا آساں تھا تِری چاہ سے پہلے مرنا
کیا ضروری ہے؟ بھلا کون سی مجبوری ہے؟
اک پیادے کا کسی شاہ سے پہلے مرنا
مری بیٹی! ترے والد کو بہت دکھ ہوگا
دیکھ! کچھ روز نہ تنخواہ سے پہلے مرنا
بے ضمیروں کے بدن تیر رہے ہوں جس میں
ایسے دریا کی گزر گاہ سے پہلے مرنا
دیکھنا! چاند کی توہین نہ کرنا غزنی
ایسا کرنا کہ شبِ ماہ سے پہلے مرنا
۔۔۔
یہ تبصرہ ہے زمانے کی بے وفائی پر
کہ اعتبار نہیں مجھ کو اپنے بھائی پر
وہی تو شخص یہاں کامیاب ٹھہرا ہے
لگائے قہقہے جو اپنی جگ ہنسائی پر
تو اپنے شہر میں اک شخص بھی دکھا مجھ کو
جو آج تک نہیں رویا غمِ جدائی پر
جو بوڑھے باپ ، نہ بیمار ماں کے کام آئی
ہزار لعنتیں بیٹے کی اس کمائی پر
اے ماں ! تو مر کے بھی بیٹے پہ مہربان رہی
لگا نہ ایک بھی پیسہ تری دوائی پر
حساب دے نہ سکے گا تو اس کے اشکوں کا
جو ماں نے خرچ کئے تھے تری پڑھائی پر
ذرا سا عکس مری شکل بھی دکھاتی ہے
میں کتنا ٹوٹ گیا ہوں تری جدائی پر
تمام لوگ تھے مصروف اس قدر غزنی
نہ ایک شخص بھی آیا مری دہائی پر
تو پینے والوں سے کچھ فاصلے پہ رہ غزنی
نہ حرف آئے کہیں تیری پارسائی پر
اگر نہیں ہے ذرا سا بھی ربط غزنی سے
تو اس کا نام بھی کیوں ؟ آپ کی کلائی پر

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker