عطاء الحق قاسمیکالملکھاری

عطا ء الحق قاسمی کا کالم:نقل در نقل !

برعکس
مجھے جب کبھی کوئی مسئلہ درپیش ہو، میں فوراً کسی موٹیوشنل اسپیکر (ترغیباتی مقرر ) کی گفتگو سنتا ہوں اور اس کے برعکس عمل کرنے سے میرا مسئلہ فوراً حل ہو جاتا ہے !
تانگہ ایسوسی ایشن
شکریہ عمران خاں، بیس سال بعد ہمارا کاروبار بحال ہوا ہے ۔
منجانب:آل پاکستان تانگہ ایسوسی ایشن!
اعزاز
پاکستان میں 74سے زائد زبانیں بولی جاتی ہیں مگر کچھ لیڈر ایسے ہیں جنہیں تمام زبانوں میں گالیاں کھانے کا اعزاز حاصل ہے ۔
سروے
مولویوں اور تبلیغیوں کی تعداد میں پاکستان پہلے نمبر پر، حاجیوں میں دوسرے نمبر پر اور ایماندار ممالک کی فہرست میں ایک سو ساٹھ ویں نمبر پر ہے !
الٹا چور ….!
پارٹی سے واپسی پر اچانک بیوی چلائی ’’سامنے دیوار ہے گاڑی روکیں ‘‘ سنیں سامنے دیوار ہے گاڑی روکیں،اتنے میں گاڑی دیوار سے جا ٹکرائی اگلے دن ہسپتال میں پڑی بیوی بولی ’’کب سے آواز دے رہی تھی سامنے دیوار ہے سنا کیوں نہیں ؟شوہر بولا ’’مجھ سے کچھ سن نہ لینا، گاڑی میں نہیں تم چلا رہی تھیں !
ریلیف پیکیج
مختاریا! عوام نوں ریلیف پیکیج مل گیا اے، پر عوام دسدی نئیں پئی۔
(مختیاریا، عوام کو ریلیف پیکیج مل گیا ہے لیکن عوام بتا نہیں رہی۔)
بلاّ!
جے ویکھاں عملاں ولے ،تے کج نئیں تیرے پلے
جے ویکھاں تقریراں ولے بلّےبلّےبلّے
چلغوزے
چلغوزے کھانے سے دل مضبوط اور خریدنے سے دل کمزور ہوتا ہے (ماہرین)
پیٹرول کی قیمت
اور اب آخر میں عمان سے قمر ریاض کا ایک سروے!
نوٹ :یہ ریٹ آج کے عمانی ریال سے پاکستانی روپے کے ایکسچینج ریٹ – ایک ریال = 441 روپے ہے ۔
یو اے ای اور دیگر خلیجی ریاستوں میں بھی چند پیسوں کے فرق کے ساتھ کم و بیش یہی ریٹ ہے ۔ اور پاکستان میں جو تیل آتا ہے اس کی کوالٹی میں بھی فرق ہوتا ہے ۔
یعنی آج کے ریٹ کے مطابق پاکستان میں پٹرول 146روپے میں فروخت ہو گا جو کہ عمان سے 44 روپے زیادہ ہے واضح رہے کہ عمان (مسقط ) پاکستان کا قریبی ہمسایہ ملک ہے جہاں فلائٹ سے پہنچنے میں ڈھائی سے تین گھنٹے لگتے ہیں ۔
یہاں یہ بات بھی واضح کر دوں کہ عمان اپنے عمانی شہریوں کو کئی معاملات میں سسبڈی دیتا ہے تاکہ وہ سہولت سے رہیں اس کے علاوہ وہاں عام عمانی شہری کی کم سے کم تنخواہ 375عمانی ریال ایک لاکھ 65 ہزار اور عام متوسط آدمی جس کے پاس اپنی یا کمپنی کی گاڑی ہے کم سے کم تنخواہ بھی کم و بیش 1 لاکھ سے 1لاکھ 25 ہزارروپے تک ہے جبکہ عام لیبر طبقہ جن کی 100 سے 150 ریال تنخواہ ہے وہ کمپنی کی رہائش میں رہتے ہیں اور ان کی دی ہوئی سہولیات استعمال کرتے ہیں جس میں ٹرانسپورٹ، میڈیکل فری ہوتی ہے ، حتی کہ دو سال بعد ریٹرن ٹکٹ اور ایک مہینے کی تنخواہ بھی بونس کے طور پر دی جاتی ہے ( یہ وہاں کے مقامی قوانین میں شامل ہے ) جبکہ پاکستان میں ایک عام لیبر کی تنخواہ زیادہ سے زیادہ 800 سے 1200روپے دیہاڑی ہے اور اسی میں اس نے گھر کے کرائے سے لے کر راشن اور ٹرانسپورٹیشن تک کے اخراجات خود کرنے ہوتے ہیں فرق صاف ظاہر ہے۔
٭٭ ٭ ٭ ٭
اب منہ کا مزہ بدلنے کیلئے شہباز خواجہ کی شاعری….
میں اپنا ساتھ بھی تو چاہتا ہوں
تمہیں پانا ہی کافی تو نہیں ہے
تمہاری آنکھ میں ایک آدھ آنسو
مرے دکھ کی تلافی تو نہیں ہے
دھنک ہے پھول ہے خوشبو ہے تم ہو
مرا ہونا اضافی تو نہیں ہے؟
موسم بدلا دیکھنے والا کوئی نہیں
ہر سُو سبزہ دیکھنے والا کوئی نہیں
چوراہے کے بیچ میں ہوں اور تنہا ہوں
اتنی دنیا دیکھنے والا کوئی نہیں
کون ہے جو روحوں کے اندر جھانک سکے
اتنا گہرا دیکھنے والا کوئی نہیں
اس کا لوٹ کے آنا بھی کیا آنا ہے
جس کا رستہ دیکھنے والا کوئی نہیں
آئینہ ہوں گرد میں لپٹا ہوں شہباز
مجھ میں چہرہ دیکھنے والا کوئی نہیں
فیصلہ
قطار میں لگے ہوئے
بکے ہوئے جھکے ہوئے
کسی کے حکم پر سزا
کسی کے حکم پر جزا
کوئی دلیل کب سنیں!
کوئی اپیل کب سنیں؟
مگر انہیں خبر نہیں ؟
کہ اور سلسلہ بھی ہے
عدالتوں کے بعد اک
خدا کا فیصلہ بھی ہے
٭٭ ٭ ٭ ٭
(بشکریہ: روزنامہ جنگ)

فیس بک کمینٹ

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker