اہم خبریںعمران عثمانیکھیللکھاری

15ممالک کے کھلاڑیوں کو قرنطینہ میں رکھ کر ورلڈ ٹی 20کرانے کا خوفناک منصوبہ : عمران عثمانی کی خصوصی رپورٹ ، نئی تفصیلات کے ساتھ

ورلڈ ٹی20 کپ2020کی آرگنائزنگ کمیٹی نے کورونا کی جاری صورتحال کے باوجود اس سال میگا ایونٹ کے انعقاد کی شمع روشن رکھی ہے،(گزشتہ روز اسی جگہ ہم نے یہ خبر سب سے قبل جاری کی تھی)۔اسکے بارے میں مزید تفصیلات بھی ہم لے آئے ہیں۔
ورلڈ ٹی 20 کی آرگنائزنگ کمیٹی نے اکتوبر کے وسط سے نومبر کے وسط تک شیڈول ایونٹ کویقینی بنانے کے لئے بہت کچھ تیار کرلیا ہے اس میں سب سے خطرناک پلان تمام غیر ملکی پلیئرز کو قرنطینہ میں رکھنے کا بھی ہے،بارڈر کی بندش کے باوجود کرکٹرزکو آسٹریلیا منتقل کرنے کا منصوبہ بھی ہے،خالی میدانوں میں میچز بھی کرانے پڑے تو کرائیں گے۔
جی ہاں،آسٹریلیا سے کرکٹ ذرائع کے مطابق ورلڈ ٹی 20 کمیٹی نے کرکٹ آسٹریلیا،حکومت آسٹریلیا،آئی سی سی،ہیلتھ کے اہم اداروں اور شریک دیگر 15 ممالک کے حکام سے رابطے شروع کردیئے ہیں۔آرگنائرز نے کسی بھی حال میں ہتھیار پھینکنے سے انکار کردیا ہے۔
18اکتوبر سے 15نومبر تک شیڈول ورلڈ ٹی 20 آسٹریلیا کے لئے اس لئے بھی اہم ہے کہ اس مختصر ترین مگر تیز ایونٹ کا یہ مردوں کا پہلا ورلڈ کپ وہاں ہونے جارہا ہے،سال کے شروع میں ویمنزورلڈ ٹی 20 کے فائنل میں آنے والے ریکارڈ 86ہزار سے زائد تماشائیوں نے حکام کے حوصلے بلند کئے ہیں تو مالی اعتبار سے بھی بڑی چاندنی کی توقعات باندھ لی ہیں۔کمیٹی نے عزم ظاہر کیا ہے کہ ایونٹ ہر حال میں ہوگا،ابھی 7ماہ کی دوری پر ہے،پہلی امید حالات کی مکمل بہتری کی ہے،اگر نہیں تو متبادل پلان نہایت ہی اہم مگر حیران کن ہے۔
کورونا کے حالات ایسے ہی رہے تو سب سے قبل حکومت آسٹریلیا سے 400سے 500کے قریب کرکٹرز،آفیشلز واسٹاف کی آسٹریلیا آمد کی خصوصی اجازت لی جائے گی چاہے ملکی بارڈر سیل ہی کیوں نہ ہوں،اس کے بعد 15 ممالک کے ہاں کورونا ٹیسٹ کٹس روانہ کی جائیں گی تاکہ کرکٹرز آنے سے قبل ٹیسٹ دیں،آسٹریلیا پہنچنے کے بعد انہیں قرنطینہ میں رکھاجائے گا تاکہ نہ وہ متاثر ہوں اور نہ کسی کو متاثر کریں،اس کے بعد انہیں اسٹیڈیم بھی نہایت محفوظ راستے سے لایا جائے گا،تماشائی اس حالت میں نہیں آسکیں گے اس لئے خالی میدانوں میں ورلڈ ٹی 20 کرایا جائے گا۔آسٹریلیا آنے والی تمام ٹیموں کو مجبور کیا جائے گا کہ وہ قرنطینہ میں چلے جائیں۔
ورلڈ ٹی 20 میں انگلینڈ،جنوبی افریقا،ویسٹ انڈیز،پاکستان،سری لنکا،بنگلہ دیش،بھارت،نیوزی لینڈ،افغانستان،آئرلینڈ،اومان،پاپا نیو جینیا،نمیبیا،ہالینڈ اور اسکاٹ لینڈسے ٹیموں نے آسٹریلیا آنا ہے،16ویں ٹیم میزبان ملک کی ہوگی۔آسٹریلیا میں اس وقت غیر ملکی اور غیر رہائشی افراد کا داخلہ منع ہے،پہلی امید حالات کی بہتری کی ہے اور دوسری کوشش منتخب افراد کی آسٹریلیا اترنے کی اجازت کی ہوگی۔ملک کے مختلف مقامات 45میچز کے لئے ریزرو ہیں اور کھلاڑیوں کے لئے ہوٹلز کی بکنگ کی جاچکی ہے۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker