عمران عثمانیکھیللکھاری

انگلینڈ کرکٹ بورڈ کا 61ملین پائونڈز کا ریلیف پیکج،100 ایونٹ اگلےسال،۔۔ عمران عثمانی کا کرکٹ نامہ

انگلینڈ کرکٹ بورڈ نے ملکی ڈومیسٹک کرکٹ سیزن کیلئے تاریخ کا سب سے بڑا پیکج 61 ملین پائونڈز کا جاری کردیا ہے جس سے ملکی ڈومیسٹک کرکٹ ،پلیئرز اور کلب کرکٹ کو مدد ملے گی.40ملین پائونڈز فوری جاری ہونگے جبکہ 21 ملین پائونڈز بعد میں بلا سود یا معمولی نفع پر ملیں گے.
کورونا وائرس کی وجہ سے پہلے ہی کرکٹ تاخیر کا شکار ہے. اگر ممکن نہ ہوسکی تو خالی گرائونڈز میں فرسٹ کلاس میچ اور انٹر نیشنل کرکٹ یقینی ہوگی لیکن وہ بھی حکومت کی اجازت ضروری ہوگی. 100 بالز ایونٹ شائقین کی موجودگی میں ممکن نہ ہوا تو وہ خالی میدانوں میں نہیں ہوگا بلکہ اگلے سال تک ملتوی کردیا جائےگا. حالات کی معمولی بہتری کی صورت میں خالی میدانوں میں کرکٹ ہوگی. ویسٹ انڈیز اور پاکستان سے ٹیسٹ سیریز اور آسٹریلیا و آئرلینڈ کے خلاف ون ڈے سیریز ایک ہی وقت میں 2 ٹیمیں روٹ اور مورگن کی قیادت میں کھیلیں گی.
ای سی بی چیف کے مطابق ملک و بورڈ تاریخ کے بدترین حالات سے گزر رہا ہے اور خرابی بڑھ سکتی ہے لیکن سنٹرل کنٹریکٹ یافتہ پلیئرز کی تنخواہ کم بھی نہیں ہوگی اور نہ معاہدے ختم ہونگے.
**جنوبی افریقی کرکٹر کو نیوزی لینڈ کی نمائندگی کی اجازت**
جنوبی افریقا میں پیدا ہونے والے کرکٹر کو نیوزی لینڈ دے نمائندگی کا حق مل گیا.انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے اجازت بھی دیدی. پروٹیز بورن ڈیوون کونوے جو 2017 میں جوہانسبرگ سے نیو زی لینڈ منتقل ہوگئے تھے ،نے 17 فرسٹ کلاس میچزمیں 70 سے زائد کی اوسط سے رنز کئے. ولنگٹن کی نمائندگی کرتے ہوئے قانون کے مطابق وقت پورا کیا ہے. وہ 28 اگست 2020سے کیویز کے پرچم تلے کھیلنے کے اہل ہونگے.
**کرکٹ جنوبی افریقہ کیلئے نیا چیلنج**
کرکٹ جنوبی افریقا کیلئے اہم عہدیداروں کا تقرر بڑا چیلنج بن گیا.سلیکٹرز،کنوینیئرز اور نیشنل کوچز کے موجودہ عہدیداروں کی مدت 30 اپریل کو ختم ہورہی ہے. بورڈ کے ایکٹو ڈائریکٹر سابق کپتان گریم اسمته نے اعلان کیا ہے کہ تمام نئ تقرریاں بذریعہ اشتہار ہونگی .ٹیسٹ کپتان کیلئے ایک بار پھر مشاورت ہوگی فا ف ڈوپلیسی استعفی دے چکے .ٹیم کی اگلی سیریز سری لنکا اور ویسٹ انڈیز سے ہیں.
**آئی پی ایل کا اچھوتا مگر نیا منصوبہ **
بھارتی آئی پی ایل اپنی اصل تاریخ 29 مارچ سے پہلے ہی آگے جاچکی .دی گئی نئی تاریخ 15 اپریل سے بھی آغاز ممکن نہیں ہے. غیرملکی پلیئرز بھی آمادہ نہیں ہیں .مستقبل قریب میں بھی حکام کو اچھی امیدیں نہیں. حالات بہتر ہوتے وقت لگے گا جبکہ آگے شیڈول بھی بہت مصروف ہوگا.
اس کے لئے نئے منصوبے کا انکشاف ہوا ہے. آئی پی ایل فرنچائزز اب ایونٹ کو مختصر کرکے مقامی کرکٹرز کے ساتھ چند میچ کھیل کر ایڈیشن مکمل کرنے پر آمادہ ہیں. حتمی اعلان جلد متوقع ہے.
**بھارتی کرکٹ 5 سے 6 سال پیچھے**
بھارتی کرکٹ 5 سے 6 سال پیچھے چلی گئی .اس بات کا انکشاف کسی اور نے نہیں بلکہ خواتین کرکٹ ٹیم کی قائد نے کیا ہے. بھارتی کپتان ہرمن پریت کور کہتی ہیں کہ ہماری خواتین کرکٹ آسٹریلیا اور انگلینڈ سے 5یا 6 سال پیچھے ہے. ایسے میں 2021کا ورلڈ کپ جیتنا مشکل ہے.

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker