اختصارئےلکھاری

دوسرا نند کشور وکرم پیدا نہیں ہوگا ۔۔ مشرف عالم ذوقی

چتا سے شعلے اٹھ رہے تھے۔ آگ ابھی ٹھنڈی نہیں ہوئی تھی میں گھر چلا آیا۔ 27 اگست کو نند کشور وکرم نے اس دنیا کو الوداع کہہ دیا ، جس دنیا کے بارے میں اب ان کا خیال تھا کہ یہ دنیا جینے کے لائق نہیں رہ گئی ہے۔ 26 اگست دوپہر تین بجے ان کا فون آیا، ذوقی مجھ سے ملو۔ میں نے 27 تاریخ تین بجے ملنے کا وعدہ کیا۔ساڑھے بارہ بجے وکرم صاحب کے بیٹے وکاس دت کا فون آیا، وکرم صاحب نہیں رہے۔ میں نے جلدی جلدی کچھ دوستوں کو اطلاع دی۔ جب وکرم صاحب کے گھر پہنچا تو وہاں فاروق ارگلی موجود تھے ہم نے آخری دیدار کیا۔ساڑھے چار بجے گیتا کالونی شمشان گھاٹ آ گئے۔ یہاں زمرد مغل، ایم رحمٰن ایڈووکیٹ، ضیا حسن مدیر آجکل پہلے سے موجود تھے۔ آخری رسم ان کے بیٹے نے ادا کی۔ میں نے ایک فرشتے کا دیدار کیا جس کا چہرہ نورانی تھا اور ایسا محسوس ہو رہا تھا، جیسے یہ چہرہ اب آواز دینے والا ہو۔ مرنے کے بعد ایسا شفاف نورانی چہرہ میں نے اپنی زندگی میں کم دیکھا ہے۔ میں تین بجے ملاقات کرنے والا تھا اور اب میں سلگتی چتا کے کنارے کھڑا تھا۔ مجھے ان کی باتیں یاد آ رہی تھیں۔ میں اپنا شرادھ اپنی زندگی میں کرنا چاہتا ہوں۔ فن اور شخصیت پر آخری کتاب میں نے ترتیب دی تھی۔ شرادھ کے دن وہ اس کتاب کا اجرا کرنے والے تھے۔ اردو کو لے کر بہت سے منصوبے تھے، جن کا ذکر وہ برابر کرتے تھے۔ آخری سانس تک اردو کا یہ عاشق اردو کے بارے میں ہی سوچتا رہا۔ موت سے چار دن قبل ایک کتاب کے اجرا میں بھی ہم دونوں شریک تھے۔ اس وقت کون کہہ سکتا تھا، کہ چار دن بعد ہم اردو کے مجاہد، سفیر، عاشق، اور محبوب کو الوداع کہہ رہے ہوں گے۔ میں ابھی بھی ان شعلوں کی زد میں ہوں۔ میں نے اپنی زندگی میں وکرم صاحب جیسا عظیم انسان نہیں دیکھا۔ کوئی دوسرا نند کشور وکرم نہیں آئے گا۔ ایک ایسا شخص جو کسی کونسل، کسی اکادمی کے بھروسے نہیں رہا۔ جس کے ادبی کارنامے کسی کونسل اور اکادمی کے کارناموں سے کہیں بڑے ہیں۔ آج اردو زبان و ادب کی کتاب کا ایک روشن باب بند ہوتا ہے۔ دنیا سے رخصت ہوتے ہی خزاں اپنا رنگ دکھانا شروع کر دیتی ہے۔ وکرم صاحب، ہم آپ کو نہیں بھولیں گے۔ 34 برس پرانا یارانہ تھا۔ کیسے بھول سکتا ہوں۔ آپ بار بار یاد آ ئیں گے۔ جب جب اردو کا تذکرہ ہوگا، آپ کا نام ہونٹوں پر آئے گا۔ آپ ہمیشہ ہمارے دلوں میں زندہ رہیں گے۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker