اہم خبریں

صحافیوں کی جانب سے تھپڑ گردی کی مذمت ، فواد چوہدری کی برطرفی کا مطالبہ

اسلام آباد :پی ایف یو جے سمیت مختلف صحافی تنظیموں نے فواد چوہدری کے اس اقدام کی مذمت کی ہے ۔ صدر ایمرامحمد آصف بٹ اور سیکرٹری ایمراسلیم شیخ و ایمرا باڈی کی جانب سے وفاقی وزیر فواد چودھری کی جانب سے سینئر اینکرپرسن مبشرلقمان کو تھپڑ مارنے کے اقدام کی شدید مذمت کی گئی ہے۔
صدرایمرامحمدآصف بٹ نے کہا مقامی ہوٹل میں محسن لغاری کے بیٹے کی دعوت ولیمہ میں شرکت کے موقع پر وفاقی وزیر نے سینئر اینکرپرسن مبشر لقمان کو تھپڑ مارنےکا جواقدام کیا ہے وہ کسی صورت قابل برداشت نہیں۔ وفاقی وزیر فواد چودھری نے تقریب میں جہانگیر ترین ، اسحاق خاکوانی سمیت تحریک انصاف کی سینئر قیادت کی موجودگی میں ایسی حرکت کرکے قیادت کو بھی بدنام کیا
وفاقی وزیر کا عہدہ اس طرح کی اخلاقیات سے گری حرکات سے گریز کرنے کا تقاضہ کرتا ہے۔ انہوں نے کہا وفاقی وزیر فواد چودھری نے اپنی اس حرکت پر سینئر اینکرپرسن مبشر لقمان سمیت میڈیا سے معافی نہ مانگی تو ان کا مکمل بائیکاٹ کیا جائے گا۔ انہوں نے وزیر اعظم سے بھی مطالبہ کیا کہ فواد چوہدری کو کابینہ سے نکالا جائے
پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے ایک شادی کی تقریب کے دوران ٹی وی اینکر مبشر لقمان کو تھپڑ رسید کر دیا۔
ذرائع کے مطابق جہانگیر ترین، اسحاق خاکوانی اور فواد چوہدری محسن لغاری کے بیٹے کی دعوت ولیمہ میں بات چیت کر رہے تھے کہ ٹی وی اینکر مبشر لقمان کے آتے ہی فواد چوہدری کا ان سے جھگڑا ہو گیا۔
ذرائع کا بتانا ہے کہ فواد چوہدری نے ٹی وی اینکر کو تھپڑا مارا جس کے بعد دونوں گتھم گتھا ہو گئے۔ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ تقریب میں موجود دیگر شخصیات نے دونوں میں بیچ بچاو کرایا۔ذرائع کے مطابق ٹی وی اینکر نے حریم شاہ سے متعلق فواد چوہدری پر الزام لگایا تھا۔
فواد چوہدری نے اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ ایسے اینکر کا صحافت سےکوئی تعلق نہیں ہے، صحافت میں گھسے ایسے لوگوں کو بےنقاب کرنا سب کا فرض ہے۔خیال رہے کہ فواد چوہدری نے پہلے بھی فیصل آباد میں ایک تقریب میں ایک ٹی وی اینکر کو تھپڑ مارا تھا۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker