اہم خبریں

کورونا :برطانوی وزیر اعظم انتہائی نگہداشت یونٹ منتقل : امریکہ میں دس ہزار اموات

لندن : دنیا بھر میں کورونا وائرس کا پھیلاؤ جاری ہے ، وائرس کا شکار ہونے والے برطانوی وزیراعظم بورس جانسن کے دفتر 10 ڈاؤننگ سٹریٹ کے ایک ترجمان کے مطابق وزیر اعظم کو ہسپتال کے انتہائی نگہداشت یونٹ میں منتقل کر دیا گیا ہے اور انھوں نے وزیر خارجہ ڈومنک راب سے کہا ہے کہ وہ ان کی ذمہ داریاں سنبھال لیں۔جانز ہاپکنز یونیورسٹی کے مطابق امریکہ میں کورونا وائرس سے ہونے والی اموات کی تعداد 10 ہزار سے تجاوز کر گئی ہے۔ امریکہ میں کل 10 ہزار 335 اموات ہوئی ہیں جبکہ مصدقہ متاثرین کی تعداد 3 لاکھ 47 ہزار ہے۔فرانس میں وبا کے آغاز کے بعد سے 24 گھنٹوں میں ملک میں اب تک کی سب سے زیادہ 833 اموات پیر کو رپورٹ کی گئی ہیں۔
سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض ،جدہ اور دیگر شہروں میں بھی چوبیس گھنٹے کے کرفیو کا اعلان کیا گیا ہے ۔
سعوی وزارت داخلہ نے مقامی شہریوں اور مقیم غیر ملکیوں کی صحت و سلامتی کو یقینی بنانے کے لیے حفاظتی تدابیر کا دائرہ اور معیار بلند کرنے کا فیصلہ کرلیا- صحت حکام کی سفارش پر کئی شہروں میں کرفیو چوبیس گھنٹے کا کیا گیا ہے-
سعودی خبررساں ادارے ایس پی اے کے مطابق وزارت داخلہ نے تین بڑے نئے فیصلے کیے ہیں-
ریاض، دمام، ظہران اورہفوف میں کرفیو چوبیس گھنٹے کردیا گیا- علاوہ ازیں جدہ طائف القطیف اور الخبر کمشنریوں میں بھی کرفیو کا دورانیہ بڑھا کر چوبیس گھنٹے کردیا گیا-
ان شہروں میں آمد ورفت بھی مستقل بنیادوں پر منع کردی گئی- عمل درآمد پیر سے شروع کردیا گیا- کرفیو تا اطلاع ثانی چوبیس گھنٹے رہے گا-چوبیس گھنٹے کے کرفیو سے سرکاری اور نجی سیکلٹرز کے اہم شعبوں کے ملازمین مستثنی ہوں گے- ایسے کارکن جنہیں کرفیو کے دوران ڈیوٹی جاری رکھنا ضروری ہوگی وہ شاہی فرمان کے مطابق اس پابندی سے مستثنی ہوں گے-
دوسرا فیصلہ یہ کیا گیا ہے کہ چوبیس گھنٹے کے کرفیو کے دوران مذکورہ شہروں اور کمشنریوں میں آباد سعودی اورمقیم غیر ملکیوں کو انتہائی ضروری کام انجام دینے کے لیے گھروں سے نکلنے کی اجازت دی جائے گی-
مثال کے طور پرعلاج معالجے اور کھانے پینے کی اشیا حاصل کرنے کے لیے محلے کے لوگ اپنے محلے کے دائرے میں گھروں سے صبح 6 بجے سے لیکر سہ پہر 3 بجے تک نکل سکیں گے-
چوبیس گھنٹے کے کرفیو کے دوران گاڑیوں کو محلے کے اندر نقل و حرکت کی اجازت ہوگی تاہم گاڑی میں صرف ایک ہی شخص کی پابندی کی جائے گی- علاوہ ازیں گاڑی میں ڈرائیور کے علاوہ صرف ایک شخص ہی بیٹھ سکے گا-
تیسرا فیصلہ یہ کیا گیا ہے کہ فارمیسیوں، صحت اداروں، کھانے پینے کی اشیا فروخت کرنے والی دکانوں، پٹرول سٹیشنوں، گیس سیلنڈر کے مراکز کے علاوہ کسی بھی کاروباری سرگرمی کی اجازت نہیں ہوگی-

برطانوی وزیراعظم بورس جانسن کے دفتر 10 ڈاؤننگ سٹریٹ کے ایک ترجمان کے مطابق وزیر اعظم کو ہسپتال کے انتہائی نگہداشت یونٹ میں منتقل کر دیا گیا ہے اور انھوں نے وزیر خارجہ ڈومنک راب سے کہا ہے کہ وہ ان کی ذمہ داریاں سنبھال لیں۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker