2018 انتخاباتاہم خبریں

پاکستان کے سب سے مہنگے انتخابات : پولنگ سٹیشنوں پر طویل قطاریں

اسلام آباد: پاکستان کے گیارہویں عام انتخابات کے لئے پولنگ جاری ہے جس میں ایک اندازے کے مطابق 10 کروڑ 50 لاکھ سے زائد ووٹرز ملک کے 85 ہزار پولنگ اسٹیشنز پر اپنا حق رائے دہی استعمال کریں گے ۔ووٹنگ کا آغاز صبح 8 بجے ہوا اور یہ سلسلہ شام 6 بجے تک جاری رہے گا، انتخابی عمل کے دوران حفاظتی اقدامات کے پیش نظر 3 لاکھ 71 ہزار فوجی اہلکاروں کو پولنگ اسٹیشنز پر تعینات کیا گیا ہے۔پولنگ کا عمل ختم ہوتے ہی انتخابی عملہ ووٹوں کی گنتی شروع کردے گا۔خیال رہے کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) نے ذرائع ابلاغ کو شام 7 بجے سے پہلے انتخابی نتائج کا اعلان نہ کرنے کی ہدایت کی ہے۔ الیکشن 2018 پر آنے والے اخراجات گزشتہ 2 انتخابات پر خرچ ہونے والی مجموعی رقم سے 3 گنا زیادہ ہیں، جس میں زیادہ تر رقم سیکیورٹی اہلکاروں کی تعیناتی پر خرچ کی گئی ہے۔الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کے اندازے کے مطابق انتخابی عمل پر 21 ارب روپے سے زائد رقم خرچ ہونے کا امکان ہے، جس میں سے 10 ارب 50 کروڑ روپے سے زائد معمول کے انتخابی عمل، جس میں پولنگ اسٹاف کی تربیت، الیکشن میں فرائض انجام دینے والے انتخابی عملے کے معاوضے، انتخابی مواد کی چھپائی، مواصلات اور دیگر معاملات کی مد میں خرچ ہوں گے۔ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق الیکشن کمیشن کے تخمینے کے مطابق فوج کو ادا کیے جانے والے فنڈ کی لاگت بھی اتنی ہی رہنے کی توقع ہے، تاہم اس حوالے سے الیکشن کمیشن کے بعد ادائیگیوں کے بل کی بنیاد پر ہی حتمی طور پر کچھ کہا جاسکتا ہے۔واضح رہے کہ 2008 میں ہونے والے عام انتخابات پر ایک ارب 84 کروڑ روپے کے اخراجات آئے تھے، جو 2013 کے عام انتخابات میں بڑھ کر 4 ارب 73 کروڑ روپے تک پہنچ گئی تھی، یعنی اس میں تقریباً 157 فیصد اضافہ ہوا تھا.2008 میں پاک فوج کو 10 کروڑ 20 لاکھ روپے سیکیورٹی اخراجات کی مد میں ادا کیے گئے تھے جبکہ 2013 میں سیکیورٹی کے لیے ادا کی جانے والی رقم 70 کروڑ 20 لاکھ روپے تھی۔
( بشکریہ : ڈان نیوز )

فیس بک کمینٹ

متعلقہ تحریریں

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker