اختصارئےبلوچستانلکھاری

بلوچ تعصب ؟ ۔۔ذوالفقار علی زلفی

جناب عالی گر شیشہِ دل پر بال نہ آئے تو عرض ہے ـــــ ہمارا مقدمہ تاحال تاریخ کے عدالت میں فیصلے کا منتظر ہے سو ہار جیت کا قصہ فی الحال رہنے دیں کیوں کہ جس دن وہ فیصلہ آئے گا اہلِ پنجاب اپیل کرنے کے قابل بھی نہ ہوں گے ـ جیسے بنگال کی خون آشام آزادی کو تاحال “سقوطِ ڈھاکہ” قرار دے کر ضمیر کو تھپکیاں دیتے ہیں شاید بعد میں یہ سہولت بھی نہ ملے ۔ ـ
اسٹبلشمنٹ کیا ہے؟ ایک حکمران گروہ جس کی طاقت اور قوت کا مرکز و محور پنجاب ہے ـ یہ وہ گروہ ہے جس نے ہم پر اپنے مفاد (پنجاب کے مفاد) میں بھارت دشمنی مسلط کر رکھی ہے ـ افغان دشمنی کا پٹّہ ڈالا ہے ـ جو پنجاب کے لہلہاتے کھیتوں کو بچانے کے لیے چاغی کا سینہ چیر کر ہمیں بیماریاں دیتا ہے ـ پنجاب کی صنعتوں کو محفوظ رکھنے کے لیے تراتانی کے پہاڑوں کو سرمہ بنا کر بزرگ سردار کو تالا بند تابوت کی شکل دیتا ہے ـ
تسلیم کرتے پیں بلوچ نے سو اعلی درجے کے شہری جنہیں پنجابی کہا جاتا ہے مار دیے اور ہم متعصب اور نسل پرست قوم پرست خاموش رہے ـ اس کا کیا جواب مارشل ریس کا خطاب رکھنے والے گھبرو جوان ہماری سرزمین کو روندتے رہے، ہماری بیٹیاں بازاروں میں بیچتے رہے، قرآن پر معاہدے کرکے پھانسیوں کی قطاریں لگاتے رہے، ہماری سرزمین پر جگہ جگہ قلعہ نما عقوبت خانے بناتے رہے، آنکھیں دکھاتے رہے، ہمیں اپنے خودساختہ دشمنوں کا دلال قرار دیتے رہے، ہمارے نوجوان غائب کرتے رہے، ہماری ماں بہنوں کو لہو رلاتے رہے ـ ہم نے تو کسی روشن خیال اور وسیع الذہن ظفر عمران کو شرمندہ ہوتے نہیں دیکھا ـ۔
کیا آپ یا کوئی اور پنجابی لاہور، فیصل آباد یا جہلم میں اپنے گھر میں سونے سے پہلے بلوچ فوج کے آنے کا سوچ سوچ کر لرزتے ہیں؟ ـ کیا آپ پنڈی سے گجرات جاتے دس دس دفعہ تحکمانہ لہجے اور غصیلی آنکھوں والے وردی پوش بلوچوں کو شناختی کارڈ دکھا دکھا کر ذلت کی گہری کھائی میں گرتے ہیں؟ ـ کیا آپ علی عباس جلال پوری اور ڈاکٹر مبارک علی کی کتابیں ساتھ لے کر چلنے سے گھبراتے ہیں؟ ـ کیا آپ کے ہاں اجتماعی قبروں سے بے نشان لاشیں برآمد ہوتی ہیں؟ ـ
سو پنجابی لاشیں اٹھا کر حساب کتاب کرنے نکلیں گے تو قرض دار بن کر جائیں گے ـ ہم نے کب بندوق لہرا کر پنجاب کو ترقی دینے کی زبردستی کوشش کی؟ ـ یہ تو آپ ہیں جو کبھی سندھ میں غدار تلاش کرنے نکلتے ہیں تاکہ سمندر پر قبضہ برقرار رکھا جاسکے اور کبھی بلوچستان فتح کرنے کے لیے گھوڑے تیار رکھنے کا حکم دیتے ہیں ـ کبھی پشتون کو ٹی وی پر دہشت گرد بتاتے ہیں اور کبھی بلتستان کو آنکھیں دکھاتے ہیں ـ آپ ہی خودساختہ بڑے بھائی بننے کے شوق میں غلطاں و پیچاں ہر کسی کی سرزمین پر شترِ بے مہار بن کر سب کچھ تہس نہس کرنے پر آمادہ ہیں ـ اپنے دامن کو نچوڑ کر دیکھیے ہزاروں افراد کا لہو بہہ بہہ کر نکلے گا ـ۔
شکایت خود سے کیجئے حضور ـ تعصب خود میں تلاشیے ـ ہم تو اپنی سرزمین پر چین سے جینے کے خواہش مند ہیں ـ جہلم کے گھبرو جوان ہی تھے جنہوں نے قلات کی مسجد پر گولے داغ پر ہمارا سکون غارت کیا ـ
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

فیس بک کمینٹ

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker