اختصارئےاہم خبریں

پاکستان میں ڈاکٹراور طبی عملے کے 138 ارکان کو کورونا وائرس : عالمی ادارہ صحت

اسلام آباد : پاکستان میں ڈاکٹرز اور طبی عملے کے 138 افراد اب تک کورونا وائرس کا شکار ہو چکے ہیں اور اس حوالے سے صوبہ سندھ سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے جہاں 85 ڈاکٹرز، نرسز اور طبی عملے کے افراد میں کورونا کی تشخیص ہوئی ہے۔
عالمی ادارہ صحت کی ایک تازہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ بلوچستان کے 25، پنجاب کے 12، خیبرپختونخواہ کے سات اور اسلام آباد کے پانچ ڈاکٹرز اور طبی عملے میں وائرس سامنے آیا ہے۔پاکستان کے زیر انتظام کشمیر اور گلگت بلتستان میں ایک ایک ایسا کیس سامنے آیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق یہ اعدادوشمار عالمی ادارہ صحت کو حکومت پاکستان کی جانب سے فراہم کیے گئے ہیں۔ڈبلیو ایچ او کے تجزیے کے مطابق کورونا سے متاثر زیادہ تر ڈاکٹرز اور عملے کی عمریں اکیس سے چالیس تک ہیں اور ان میں سے ستر فیصد مرد ہیں۔سوموار کو کراچی میں ڈاکٹر عبدالقادرسومرو بھی کورونا سے ہلاک ہو گئے تھے۔ وہ بھی مریضوں کے علاج کے دوران وائرس کا شکار ہوئے تھے۔
یاد رہے کہ پاکستان بھر میں ڈاکٹرز اور طبی عملے نے مناسب حفاظتی لباس اور سہولیات کی عدم دستیابی کی شکایت کی تھی اور سوموار کو احتجاج کرنے والے ڈاکٹرز کو صوبہ بلوچستان میں پولیس نے گرفتار بھی کر لیا تھا ۔
یہ واقعہ دنیا بھر میں خبروں کی زینت بنا تھا اور ایمنسٹی انٹرنیشنل ساﺅتھ ایشیا شاخ نے ڈاکٹروں کی گرفتاری کو پرامن احتجاج کے حق پر حملہ قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ کورونا وائر س کی جنگ لڑنے والے ان ہیروز کو درکار حفاظتی سامان فراہم کیا جانا چاہیے۔
تاہم بعد میں بلوچستان حکومت کے ساتھ کامیاب مذاکرات کے بعد ان کو رہا کر دیا گیا تھا۔
پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کی منگل کو جاری ایک پریس ریلیز میں بھی کہا گیا تھا کہ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی ہدایت پر بلوچستان میں ڈاکٹرز کے لیے خصوصی حفاظتی سامان پہنچایا گیا ہے۔ ڈبلیو ایچ او کے مطابق وفاقی حکومت براہ راست ملک بھر کے 153 اسپتالوں کو ڈاکٹروں اور طبی عملے کے لیے کورونا کی حفاظتی کٹس فراہم کرے گی۔
عالمی ادارہ صحت نے بھی انسٹی ٹیوٹ آف پبلک ہیلتھ کوئٹہ میں کورونا سے نمٹنے کے لیے طبی عملی کو تربیت فراہم کی ہے۔
( بشکریہ : اردو نیوز )

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker