شاعریلکھاری

پھر سے لہو لہان ہیں بازار شہر کے ۔۔ ساحل منیر

پھر سے لہو لہان ہیں بازار شہر کے
کِس نے مٹا کے رکھ دیے آثار شہر کے

دامن قبائے دخترِ جمہور چاک ہے
ڈھونڈو کہیں تو صاحبِ دستار شہر کے

آلامِ شامِ ہِجر کے آداب کی قسم
لگتے ہیں زہر جلوہء انوار شہر کے

ساحلؔ ہمیں تو آج بھی لگتے ہیں پُرفریب
اِس بزمِ اِنقلاب میں افکار شہر کے

فیس بک کمینٹ

متعلقہ تحریریں

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker