اہم خبریں

پنجاب میں تین ہزار نئے مریض : تعلیمی ادارے غیر معینہ عرصے کے لیے بند

لاہور : صوبہ پنجاب میں کورونا وائرس سے زیادہ متاثرہ شہروں میں نویں تا بارہویں جماعت کے نجی و سرکاری سکول سمیت تمام تعلیمی ادارے بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔صوبہ پنجاب کے سرکاری اعداد و شمار کے مطابق یہاں گذشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا وائرس کے 3056 نئے متاثرین کا اضافہ ہوا ہے جبکہ 67 مزید اموات ہوئی ہیں۔
ترجمان پرائمری اینڈسکینڈری ہیلتھ کیئر ڈیپارٹمنٹ کا کہنا ہے کہ صوبے میں کل متاثرین کی تعداد 288598 ہے جبکہ اب تک اس عالمی وبا سے 7964 ہلاک ہوئے ہیں۔
26 اپریل سے پنجاب کے ان شہروں میں 12ویں تک تمام تعلیمی ادارے بند رہیں گے جہاں مثبت کیسز کی شرح پانچ فیصد سے زیادہ ہے۔ خیال رہے کہ ان شہروں میں پہلی سے آٹھویں جماعت تک سکول پہلے سے بند ہیں۔ صوبائی وزیر تعلیم پنجاب ڈاکٹر مراد راس نے صوبے کے 25 اضلاع میں سکولوں کی بندش کے حوالے اہم ٹویٹ جاری کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ کورونا کے بڑھتے کیسز کے پیش نظر صوبے بھر کے کُل 25 اضلاع کے تمام سرکاری و نجی سکول بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ صوبے بھر کے 25 اضلاع میں سکول غیر معینہ مدت کے لیے بند کیے گئے ہیں۔ ’25 اضلاع میں نویں سے بارہویں جماعت کے طلبہ ہفتے میں دو دن سکول بھی نہیں آئیں گے۔ جن اضلاع میں کورونا کیسز کی شرح پانچ فیصد سے زیادہ ہیں وہاں تعلیمی سرگرمیاں معطل کردی گئیں ہیں۔‘
ان شہروں میں لاہور، قصور، راولپنڈی، ساہیوال، شیخوپورہ، سیالکوٹ، اوکاڑہ، ملتان، پاکپتن، فیصل آباد، چکوال، حافظ آباد، جھنگ، بھکر، خانیوال، ڈیرہ غازی خان، بہاولپور، بہاولنگر، و دیگر شامل ہیں۔ ’پنجاب کے باقی گیارہ اضلاع میں سکول ایس او پیز پر بھرپور عملدرآمد کے ساتھ پرانے شیڈول کے مطابق کھلے رہیں گے۔‘ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ سکولوں کو بند رکھنے کا فیصلہ مشکل، لیکن طلبہ و اساتذہ کی حفاظت کے لیے کیا گیا ہے۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker