اہم خبریںسرائیکی وسیب

بیکن ہاؤس انتظامیہ نے فیس کے تنازعے پر بچوں کو قید کر دیا : والدین کا احتجاج

ملتان :‌بیکن ہاﺅس سکول بوسن روڈ کیمپس ملتان میں فیس کے تنازعے پر سکول انتظامیہ نے بچوں کو کلاسوں سے نکال کر کمرے میں قید کردیا۔ بچوں کو دوگھنٹے حبس بے جا میں رکھا گیااس دوران نہ انہیں پانی دیااور نہ ہی والدین کواطلاع دی گئی۔اس طرح سکول کو عملی طور پر جیل بنا دیا گیا ۔



بچوں کےوالدین کے مطابق بیکن ہاﺅس انتظامیہ سپریم کورٹ کے احکامات کے باوجود بچوں سے زیادہ فیسیں وصول کررہی ہے ۔والدین کی جانب سے سپریم کورٹ کے احکامات پر عملدرآمد اور بچوں کی فیسیں ایڈجسٹ کرنے کامطالبہ کیاگیالیکن سکول انتظامیہ نے مطالبہ تسلیم کرنے سے انکارکردیا۔



بدھ کے روز جن بچوں نے فیس ادا نہیں کی تھی انہیں سکول کے ایک کمرے میں بند کردیاگیا۔والدین کودوگھنٹے بعد اس واقعہ کی اطلاع ملی جس کے بعد انہوں نے سکول آکربچوں کے ساتھ رابطہ کیا۔ایک طالب علم سید محمد رافع کے والد سیدشاہد حسین بخاری نے بتایا کہ انتظامیہ نے بچوں کو ہراساں کیا اور ان کےوالدین کو ذہنی اذیت سے دوچار کیا ۔ پرنسپل بیکن ہاﺅس سکول ملتان کے نام درخواست میں شاہدبخاری نے کہاہے کہ میرے بچے کو صبح آٹھ بجے سے 9بج کر 39منٹ تک حبس بے جا میں رکھاگیا۔اس کے ساتھ کچھ اور بھی بچے تھے ۔انہیں نہ فون کرنے کی اجازت دی گئی اور نہ انہیں پانی دیاگیا۔درخواست میں کہا گیا ہے کہ میں نے جنوری 2019 ء سے اب تک ادا کی گئی فیس کی رسید بھی مانگی ہے جو مجھے سکول کی جانب سے نہیں دی جارہی۔درخواست میں کہا گیا ہے کہ میں اب اس سلسلے میں عدالت سے رجوع کرنے کاحق رکھتا ہوں۔

فیس بک کمینٹ
Tags

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker