کھیل

ویمنز ورلڈ ٹی 20،سیمی فائنلز کھیلے بغیر ہی فائنلسٹ کون؟حتمی نام جانئے۔۔عمران عثمانی

سڈنی:ویمنز ورلڈ ٹی 20 کی سیمی فائنل لائن اپ مکمل ہوگئ لیکن کیا یہ ممکن ہے کہ میگا ایونٹ کے فائنل 4 میں داخل ہونے والی ٹیموں میں سے 2 بنا کھیلے ہی فائنل سے ایسے باہر ہوجائیں کہ جیسے یہ کوئی معمولی معرکہ ہو لیکن کرکٹ میں سب کچھ ممکن ہے اورآسٹریلیا میں ایسا ہونے کا پورا پورا انتظام ہونے جارہا ہے. 10 ٹیموں کا آئی سی سی گلوبل ایونٹ، 2 گروپ ،میچز،دن کی معرکہ آرائی کے بعد سیمی فائنل کی سیٹ بڑا اعزاز ہوتا ہے، اتنابڑا کہ پاکستان اور سری لنکا 7 ایونٹس سے یہ معراج نہیں پاسکے اور فائنل تک جانا تو اس سے بھی بڑی منزل ہے لیکن یہ منزل بعض ٹیموں کے قدموں میں بنا اگلی کوشش و حرکت کے آنے والی ہے اور متاثر ہونے والوں میں کوئ اور نہیں بلکہ ایک تو میزبان آسٹریلیا ہے جسکا سیمی فائنل جنوبی افریقہ سے ہوگا. دوسرا فیورٹ ترین ملک انگلینڈ ہے جسکا سیمی فائنل مقابلہ بھارت سے ہے. یہ دونوں ناک آؤٹ میچ جمعرات 5 مارچ کو سڈنی میں شیڈول ہیں. مقامی وقت کے مطابق سہہ پہر 3بجے بھارت اور انگلینڈ کی خواتین اور شام 7 بجے آسٹریلیا اور جنوبی افریقہ کی ویمنز ٹیموں کا سیمی فائنل کھیلا جانا ہے لیکن محکمہ موسمیات کے مطابق جمعرات 5 مارچ کو سارا دن 70 فیصد تک تیز ترین بارش کا امکان ہے،اگر ایسا ہوا اور میچ ممکن نہ ہوئے تو میزبان آسٹریلیا اور انگلینڈ فائنل سے باہر جبکہ جنوبی افریقہ اور بھارت فائنل کے اہل ہوجائیں گے اب سوال یہ ہے کہ میگا ایونٹ کے ناک آؤٹ میچز کیلئے ایسی کنڈیشن میں متبادل پلان مرتب ہوتے ہیں تو کیا ورلڈ کپ ویمنز ٹی 20 کے سیمی فائنلزکیلئے آئی سی سی کے پاس کوئی آپشن نہیں ہے ؟جی ہاں! سیمی فائنلز کا متبادل دن نہیں ہے اور سپر اوور جیسا مختصر ترین فارمولہ بھی نہیں ہے بلکہ اصول پہلے سے طے ہے کہ ایسی صورت میں اپنے گروپ میں ٹاپ کرنے والی ٹیمیں فائنل کی اہل ہونگی. اس طرح ایسی صورتحال میں اپنے اپنے گروپ میں ٹاپ کرنے والی بھارت اور جنوبی افریقہ کی ویمنز ٹیمیں 8 مارچ کے تاریخی فائنل کی ٹکٹ حاصل کرلیں گی. موسم سے متعلق پیش گوئ جزوی یا مکمل غلط بھی ہوسکتی ہے لیکن یہ بات طے ہے کہ اگر بارش نے دونوں یا کوئی ایک بھی سیمی فائنل بہادیا تو میچ کے بنا ہی اگلے مرحلے کا فیصلہ گروپ سٹیج کی پوزیشن پر ہوگا.

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker