شاعریلکھاری

سخن ور ، سخن ور ۔۔ حبیب الرحمٰن بٹالوی

( ادبی بیٹھک کی ساتویں سال گرہ پر نظم )

سُخن ور میں شامل ہیں اکثر سُخن ور
یہ ثاقب، رضی اور یہ شاکر سُخن ور

محمد علی اور قیصر مگسی
نوازش ،سُہیل اور ناصر سُخن ور

رضا عابدی ہو کہ جبار مُفتی
ہے دیکھو تو سب کا ہی محور سُخن ور

یہ ہیں اپنی بیٹھک کے سارے ستارے
کہ ان سب سے روشن معطر سُخن ور

وسیم ایک ممتاز ہستی ہے اِن میں
نہیں جس کا کوئی بھی ہمسر سُخن ور

” سُخن ور “ نے ہم کو یہ تہذیب دی ہے
بڑوں کا ادب ہو برابر سُخن ور
ادیب اور شاعر ،مقرّر،صحافی

ہے اِن سب کا مرکز ،سراسر سُخن ور

ہو رضوانہ ، بشریٰ یا نوشی و نجمہ
خواتیں کو سمجھے برابر سُخن ور
بُہت سے ادارے ادب کے یہاں پر
مگر ان میں سب کا ہے ، افسر سُخن ور

مسیح اللہ، ہاشم، حبیب اور شاہد
ہے اِن کی زباں پر سُخن ور ،سُخن ور

حبیب الّرحمٰن بٹالوی

فیس بک کمینٹ

متعلقہ تحریریں

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker