اہم خبریں

امریکہ میں ایک ہزار اموات : پاکستان میں متاثرین 1100 ہو گئے : موٹرویز بھی بند

واشنگٹن : چین اور اٹلی کے بعد امریکہ کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والا تیسرا ملک بن گیا ہے اور نیویارک سمیت اس کی مختلف ریاستوں میں صورت حال بتدریج خراب ہوتی جارہی ہے۔چند گھنٹے پہلےکورونا وائرس کے 800 سے زائد نئے کیسز سامنے آئے ہیں، جبکہ اموات کی شرح 1.5 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔
جمعرات کو پاکستان میں کووڈ-19 کے 55 سے زیادہ نئے مریض سامنے آنے کے بعد ملک میں اس وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 1102 تک پہنچ گئی ہے جن میں سے 21 افراد صحت یاب ہو چکے ہیں جبکہ آٹھ مریض اس بیماری سے اب تک ہلاک ہوئے ہیں۔
سرکاری اعدادوشمار کے مطابق دارالحکومت اسلام آباد میں اب کورونا کے مریضوں کی تعداد 25 ہو گئی ہے جبکہ بلوچستان میں 12 نئے مریض سامنے آنے کے بعد وہاں متاثرین کی تعداد 131 تک پہنچ گئی ہے۔
پنجاب کے محکمۂ صحت کے مطابق جمعرات کی صبح تک صوبے میں مصدقہ متاثرین کی تعداد 323 ہے۔ ان متاثرین میں 176 ایران سے آنے والے زائرین ہیں جبکہ اس کے علاوہ 80 متاثرین کا تعلق لاہور، 21 کا گجرات، 19 کا جہلم، آٹھ کا گوجرانوالہ، چار کا راولپنڈی سے ہے۔اس کے علاوہ ملتان اور فیصل آباد میں تین، تین جبکہ منڈی بہاوالدین، ناروال، رحیم یار خان، اٹک اور سرگودھا میں ایک ایک مریض سامنے آیا ہے۔پاکستان میں مہلک وائرس سے اب تک 22 افراد صحتیاب ہوچکے ہیں جن میں سے 14 کا تعلق سندھ، 6 کا گلگت بلتستان اور 2 کا تعلق اسلام آباد سے ہے۔
آج بروز جمعرات پاکستان میں کورونا کے اب تک 29کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جن میں سے بلوچستان میں 12، اسلام آباد میں 9 اور سندھ میں 8 کیسز رپورٹ ہوئے۔
پاکستان میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے سدباب کے سلسلے میں جمعرات سے تمام موٹر ویز کو ٹریفک کے لیے بند کیا جا رہا ہے۔موٹر وے پولیس کے ترجمان کے مطابق اس بندش کے بعد موٹروے پر ہر قسم کی مسافر بردار گاڑیوں کا داخلہ مکمل بند ہو گا تاہم مال بردار گاڑیوں، تیل کی ترسیل والی گاڑیوں اور ضروری اشیائے خوردونوش والی گاڑیوں کو کم سے کم عملے کے ساتھ داخلے کی اجازت ہو گی۔ترجمان کا کہنا ہے کہ اس کے علاوہ نجی گاڑیوں کو تسلی بخش وجہ بتانے کے بعد دو یا دو سے کم افراد کے ساتھ سفر کرنے کی اجازت ہو گی۔بسوں اور ٹرینوں کے بعد ملک بھر میں آج سے پروازیں بھی بند کردی گئیں۔
وفاقی حکومت نے ایک ہفتے کے لیے اندرون ملک فضائی آپریشن معطل کیا ہے جو 2 اپریل کی صبح 6 بجے تک معطل رہے گا تاہم اس دوران کارگو اور خصوصی پروازیں ضروری کلیئرنس کے بعد پابندی سے مستثنیٰ ہوں گی۔اس کے علاوہ پی آئی اے نے شمالی علاقہ جات کے لیے پروازیں جاری رکھنے کی خصوصی اجازت حاصل کی ہے۔ترجمان ایوی ایشن ڈویژن کے مطابق فیصلہ شمالی علاقہ جات سے براہ راست رابطہ برقرار رکھنے کے لیے کیا گیا ہے۔واضح رہے کہ سندھ میں لاک ڈاؤن کے بعد کراچی اور سکھر ائیرپورٹ 24 مارچ کو ہی بند کردیئے گئے تھے جب کہ 25 مارچ سے 31 مارچ تک ملک بھر میں ٹرین آپریشن بھی معطل رہے گا۔

فیس بک کمینٹ
Tags

متعلقہ تحریریں

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker